وزیرستان: امریکی ڈرون طیارہ گر کر تباہ

Image caption امریکی جاسوس طیارہ گرانے کی ذمہ داری ابھی تک کسی تنظیم نے قبول نہیں کی ہے

پاکستان کے قبائلی علاقے جنوبی وزیرستان میں حکام کا کہنا ہے کہ ایک امریکی جاسوس طیارہ گر کر تباہ ہوگیا ہے۔

فوج کے ایک اعلیٰ اہلکار نے بی بی سی کے نامہ نگار دلاورخان وزیر کو بتایا کہ یہ واقعہ اتوار کی صُبح نو بجے کے قریب تحصل مکین کے علاقے زنگڑہ میں پیش آیا۔

انہوں نے کہا کہ اس علاقے میں طالبان شدت پسند موجود نہیں ہے اس لیے ہو سکتا ہے کہ جاسوس طیارہ کسی فنی خرابی کی وجہ سے گرا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ جاسوس طیارے پر کسی قسم کے حملے کی اطلاعات نہیں ہیں۔

چمن: امریکی ڈرون گر کر تباہ

دوسری طرف جنوبی وزیرستان میں امریکی جاسوس طیارہ گرانے کی ذمہ داری ابھی تک کسی تنظیم نے قبول نہیں کی ہے۔

اس پہلے بھی جنوبی وزیرستان کے علاقے انگور اڈہ میں ایک امریکی جاسوس طیارہ گر کر تباہ ہوا تھا، جس کی ذمہ داری ملا نذیر گروپ کے مقامی طالبان نے قبول کی تھی۔

گروپ کے ایک ترجمان اس وقت بتایا تھا کہ امریکی جاسوس طیارہ ان کے ’مجاہدین‘ نے مار گرایا ہے۔

بغص سرکاری اہلکاروں کا کہنا ہے کہ زنگڑہ کے علاقے میں موجود فوجیوں نے طیارے کے ملبے کو اپنے قبضے میں لے لیا ہے لیکن فوجی اہلکار نے اس بات سے لاعلمی کا اظہار کیا۔

یاد رہے کہ جنوبی وزیرستان کے علاقے محسود میں بیت اللہ محسود گروپ کے خلاف فوجی آپریشن کے بعد نہ صرف طالبان شدت پسند علاقے سے بے داخل ہوگئے بلکہ لاکھوں عام شہری نے بھی نقل مکانی کر کے پاکستان کے دوسرے علاقوں میں منتقل ہوگئے ہیں۔

جس علاقے میں طیارہ گرا ہے یہ علاقےاس وقت مکمل طور پر غیر آباد ہے اور اس علاقے میں کسی قسم کی آبادی موجود نہیں ہے۔

اسی بارے میں