’امتیازی سلوک برداشت نہیں کیا جائےگا‘

پاکستانی ہندو
Image caption صدر زرداری نے دلتوں سے امتیازی سلوک پر صوبائی حکومت سے رپورٹ طلب کی ہے

پاکستان کے صدر آصف علی زرداری نے سندھ میں سیلاب متاثر ہندو دلت کمیونٹی سے امدادی سامان کی تقسیم میں امتیازی سلوک اور کیمپوں میں داخل ہونے کی اجازت نہ دینے کی اطلاعات کا نوٹس لیا ہے۔

صدارتی ترجمان کے مطابق صدر زرادری نے دلتوں سے امتیازی سلوک کے بارے میں صوبائی حکومت سے رپورٹ طلب کی ہے اور تمام محروم اور اقلیتی کمیونٹی کو بلا تفریق مدد فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔

صدر زرداری نے کہا ہے کہ ذات یا نسل کی بنیاد پر کسی کو امداد یا ریسکیو سے محروم رکھنے کا کوئی بھی عمل برداشت نہیں کیا جائے گا۔

بی بی سی کے نامہ نگار ریاض سہیل کے مطابق بدین، میرپورخاص، تھر پارکر، عمر کوٹ اور سانگھڑ میں ہندو اقلیتی لوگوں کی جانب سے انہیں رلیف کارروائیوں میں نظر انداز کرنے کی شکایت کی گئی ہیں۔

ٹھٹہ بدین روڈ، بدین حیدرآباد روڈ، حیدرآباد میرپورخاص روڈ اور میرپورخاص سانگھڑ روڈ پر سڑک کے دونوں طرف اقلیتی فرقے کے لوگ کھلے آسمان کے نیچے بیٹھے ہوئے نظر آتے ہیں، بعض تنظیموں کی جانب سے انہیں کچھ خیمے فراہم کیے گئے ہیں۔

کنڈیاری، سندھڑی اور کڑیو گھنور میں اقلیتی برادری کی جانب سے امدادی سامان کی عدم فراہمی پر احتجاج بھی کیا گیا ہے۔

اسی بارے میں