تورغر: دھماکے میں تین پولیس اہلکار ہلاک

فائل فوٹو
Image caption صوبہ خیبر پختونخوا میں اس سے پہلے بھی کئی بار پولیس پر حملے ہو چکے ہیں

صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع تورغر میں حکام کے مطابق پولیس کی ایک گاڑی بارودی سرنگ سے ٹکرانے کے نتیجے میں تین پولیس اہلکار ہلاک اور دس زخمی ہو گئے ہیں۔

تورغر کے ضلعی رابط افسر فرید خان نے بی بی سی کے نامہ نگار دلاور خان وزیر کو بتایا کہ سنیچر کو صدر مقام جُدبا سے تقریباً پندرہ کلومیٹر دور جنوب مشرق کی جانب شگئی کے مقام پر پولیس کی گاڑی اس وقت ایک بارودی سرنگ سے ٹکراگئی جب وہ جُدبا سے ضلع ہنگو کی طرف جا رہی تھی۔

فرید خان نے بتایا کہ دھماکے میں تین پولیس اہلکار ہلاک اور دس زخمی ہو گئے ہیں۔

اہلکار کے مطابق زخمیوں کو بٹ گرام سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے اور زخمیوں میں سے پانچ کی حالت تشویشناک ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پولیس اہلکار ایک ٹرک میں سوار تھے جو تربیت حاصل کرنے ہنگو جا رہے تھے۔

انہوں نے بتایا کہ ابتدائی تحقیقات سے پتہ چلا ہے کہ بم پہلے سے سڑک کے کنارے نصب کیاگیا تھا تاہم پولیس نے واقعے کی مزید تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

پولیس کا کہنا ہے اس واقعہ کے بعد پولیس کی نفری علاقے میں پہنچ گئی تھی لیکن ابھی تک کسی قسم کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے اور نہ ہی ابھی تک کسی نے اس واقعہ کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

یاد رہے کہ تورغر کو حال ہی میں عوامی نیشنل پارٹی کے دورے حکومت میں ضلع کا درجہ دیاگیا ہے جس میں ابھی تک پولیس کی مطلوبہ نفری مکمل نہیں ہے۔ ضلع میں بھرتی کیے گئے پولیس اہلکاروں کی تربیت کا عمل جاری ہے۔

اسی بارے میں