بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خلاف مظاہرے

Image caption مظاہرین کے مطابق انہیں پندرہ روز سے بیس گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ کا سامنا ہے

بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ کے خلاف لاہور سمیت پنجاب کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے ہوئے اور بعض مقامات پر شہریوں نے ٹائروں کو آگ لگائی اور ٹریفک بلاک کیے رکھی۔

لاہور سے نامہ نگار علی سلمان کے مطابق اتوار کے روز لاہور فیصل آباد بہاولپور ملتان سمیت پنجاب کے مختلف شہروں اور قصبوں میں شہریوں نے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خلاف چھوٹے بڑے احتجاجی مظاہرے کیے ہیں۔

مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور بینر اٹھا رکھے تھے جن پر ’ہائے بجلی ہائے ہائے‘ اور ’لوڈ شینڈنگ نا منظور‘ درج تھا۔ مظاہرین نے صدر زرداری کے علاوہ مسلم لیگ نون کی پنجاب حکومت کے خلاف بھی نعرے بازی کی۔

لاہور کینال روڈ کو کئی گھنٹوں تک بلاک کیے رکھنے والے مظاہرین نے بی بی سی کو بتایا کہ پندرہ روز سے انہیں بیس گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’ کینال ویو اور جوہر ٹاؤن لاہور کے اچھے علاقے ہیں یہ کوئی کچی بستیاں نہیں ہیں، یہاں سے میاں نواز شریف کا گھر صرف چار کلومیٹر کے فاصلے پر ہے لیکن اس کے باوجود بجلی کی اس قدر لوڈ شیڈنگ کا سامنا ہے۔‘

ایک شہری نے بتایا کہ لوڈ شیڈنگ کے ساتھ ہی پانی بھی چلا جاتا ہے جس سے شہریوں کی تکلیف میں اضافہ ہورہا ہے۔ مظاہرہ کرنے والوں میں خواتین بھی شامل تھیں۔

بجلی فراہم کرنے والے ادارے پیپکو کے مطابق اس وقت بجلی کی قلت بڑھ کر سات ہزار میگا واٹ سے تجاوز کر گئی ہے۔ حکام اس کی وجہ یہ بتاتے ہیں کہ آئندہ فصل کے لیے پانی ذخیرہ کرنے کی خاطر ڈیموں سے پانی کا اخراج کم کردیا گیا ہے۔

لاہور فیصل آباد کے صنعتکاروں کا کہنا ہے کہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے صوبے کی صنعتیں بری طرح متاثر ہورہی ہیں اور پیداوار میں کمی کے علاوہ بے روزگاری میں اضافہ ہورہا ہے۔

ادھر وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ڈینگی وائرس کی وجہ سے لاہور کومستثنی قرار دیا جائے۔ ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ چودھری اسلم نے بی بی سی کو بتایا کہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ سے لوگ کھلے آسمان تلے سونے پر مجبور ہیں جہاں وہ مچھروں کا نشانہ بنتے ہیں۔اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں کے وراڈز میں پنکھے نہیں چلتے جس کی وجہ سے بیماروں کی تکالیف میں اضافہ ہورہا ہے۔

انہوں نے کہاکہ ڈینگی کے علاج کے حساس آلات جرنیٹر پر چلانے کی وجہ سے وہ خراب ہورہے ہیں۔ مسلم لیگ نون کے رکن قومی اسمبلی خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ لاہور کو لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دینے کے لیے وہ قومی اسمبلی میں تحریک التوائے کار جمع کروا رہے ہیں اور اگر ان کا مطالبہ تسلیم نہ ہوا تو لاہور کی سڑکوں پر احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے۔

اسی بارے میں