بم حملے میں ایف سی کے دو اہلکار ہلاک

فائل فوٹو، تربت میں دھماکہ تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو فوری طور پر سول ہسپتال تربت منتقل کردیاگیا۔

بلوچستان کے علاقے تربت میں فرنٹیئر کور کے ایک قافلے پر ریمورٹ کنٹرول بم سے حملہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں ایف سی کے دو اہلکار ہلاک اور تین زخمی ہو گئے ہیں۔ دھماکے میں ایف سی کی ایک گاڑی بھی تباہ ہو گئی ہے۔

کوئٹہ سے بی بی سی کے نامہ نگار ایوب ترین کے مطابق بدھ کو فرنٹیئر کور کا ایک قافلہ تربت سے مند جارہا تھا کہ راستے میں ناصرآباد کے مقام پر سڑک کے کنارے نصب ریمورٹ کنٹرول بم سے دھماکہ ہوا۔

دھماکے سے ایف سی کے دواہلکار ہلاک اور تین زخمی ہوئے ہیں۔ ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو فوری طور پر سول ہسپتال تربت منتقل کردیاگیا اور واقعہ کے بعد پولیس اور ایف سی کی بھاری نفری نے جائے وقوعہ پر پہنچ کرعلاقے کی ناکہ بندی کرلی۔

تاہم آخری اطلاع تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی تھی اور نہ ہی کسی تنظیم نے حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

کوئٹہ میں سکیورٹی فورسز کے ذرائع نے ایف سی پر حملے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ دھماکے میں ہلاک ہونے والوں کو بذریعہ ہیلی کاپٹر کوئٹہ منتقل کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل بھی مند اور تربت میں ایف سی کے اہلکاروں پر اس طرح کے کئی حملے ہوئے ہیں جس میں سے اکثر واقعات کی ذمہ داری بلوچ مزاحمت کاروں کی مختلف تنظمیں قبول کرچکی ہیں۔

اسی بارے میں