بینظیر قتل: سات ملزمان پر فردِ جرم عائد

فائل فوٹو تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بینظیر بھٹو ستائیس دسمبر دو ہزار سات کو راولپنڈی میں ایک خودکش حملے میں ہلاک ہوگئی تھیں

راولپنڈی کی انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو کے مقدمۂ قتل میں دو پولیس افسران سمیت سات ملزمان پر فردِ جرم عائد کر دی ہے۔

انسدادِ دہشتگردی عدالت میں جج شاہد رفیق کے سامنے عائد کی جانے والی فردِ جرم میں ان افراد پر قتل، اقدام قتل اور اعانتِ مجرمانہ اور انسدادِ دہشتگردی کی دفعہ سات کے تحت الزامات لگائے گئے ہیں۔

سنیچر کو اڈیالہ جیل میں ہونے والی سماعت کے دوران عدالت میں مقدمے کے ملزمان پیش ہوئے اور انہوں نے فردِ جرم کی صحت سے انکار کیا جس پر عدالت نے استغاثہ کو انیس نومبر کو شہادتیں پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

اس مقدمۂ قتل میں ڈی آئی جی سعود عزیز اور ایس ایس پی خرم شہزاد فی الحال ضمانت پر ہیں جبکہ سابقہ حکومت کے دور میں مختلف علاقوں سے گرفتارکیے جانے والے پانچ دیگر ملزمان تین سال سے زائد عرصے سے جیل میں ہیں۔

اسی بارے میں