’اقتدار پر قبضہ نہ کرنے کے اعلان پر شکریہ‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے چیف آف آرمی سٹاف جنرل اشفاق پرویز کیانی کے اس بیان پر ان کا شکریہ ادا کیا ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ فوج اقتدار پر قبضہ نہیں کرنا چاہتی ہے۔

الطاف حسین نے یہ شکریہ ملتان میں ایک جلسہ عام سے ٹیلی فونک خطاب کے دوران کیا۔

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے کہاکہ چیف آف آرمی سٹاف نے اعلان کیا ہے کہ وہ جمہوری حکومت ہٹانے کے لیے کوئی ہتھکنڈا استعمال نہیں کررہے جس پر وہ چیف آف آرمی سٹاف کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔

الطاف حسین نے کہا کہ وہ صدر آصف زرداری کو مشورہ دے چکے ہیں کہ افواج پاکستان، قومی سلامتی کے ادارے اور حکمران آپس میں بیٹھ کر اپنی غلط فہمیوں کو دور کر لیں کیونکہ ان کے بقول پاکستان بین الاقوامی سازشوں کے تحت خطرات میں گھرا ہوا ہے۔

لاہور سے بی بی سی کے نامہ نگار علی سلمان کے مطابق الطاف حسین نے اپنے خطاب میں جنوبی پنجاب اور ہزارہ صوبے سمیت ملک میں چھوٹے صوبے بنانے کی حمایت کی اور اپنے جماعت کے اراکین اسمبلی و سینیٹ کو ہدایت کی کہ وہ پارلیمنٹ میں جنوبی صوبے کےلیے قرار داد پیش کریں۔

انہوں نے کہاکہ ایم کیو ایم وہ واحد جماعت ہے جس کے منشور میں ہی سرائیکی صوبے کا مطالبہ شامل ہے۔

الطاف حسین نے جلسے میں اپنے مخصوص انداز میں پنجاب کے جاگیر داروں اور وڈیروں کو للکارا اور کہا کہ آج جو انقلاب کی بات کر رہے ہیں وہ سن لیں کہ بڑے بڑے محلوں میں رہنے والے انقلاب نہیں لا سکتے۔

انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم واحد جماعت ہے جس میں کوئی جاگیردار کوئی وڈیرا چور لٹیرا شامل نہیں ہے۔

ملتان کی سپورٹس گراؤنڈ میں بچھائی گئی تمام کرسیاں جلسہ کے شرکاء سے بھر گئی تھیں اور کراچی کے جلسوں کی طرح الطاف حسین کی اپیل پر جلسہ گاہ کے شرکاء نے ایک منٹ خاموش رہ کر بھی گذارا۔

اسی بارے میں