بینظیر کی برسی، عوامی طاقت کے اظہار کا عزم

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

حکمران پیپلز پارٹی مرحوم چیئرپرسن بینظیر بھٹو کی چوتھی برسی کے موقعے پر عوامی طاقت کے اظہار کا عزم رکھتی ہے۔

لاڑکانہ میں گڑھی خدابخش میں منگل کو بینظیر بھٹو کی برسی کے انتظامات مکمل کرلیئے گئے ہیں، اس موقعے پر صدر آصف علی زرداری، ان کے صاحبزادے اور پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری بھی خطاب کریں گے۔

متنازعہ میموگیٹ اسکینڈل اور علالت کے بعد صدر زرداری پہلی مرتبہ عوام اور میڈیا سے مخاطب ہوں گے۔ پیپلز پارٹی کے حلقوں کا کہنا ہے کہ ملک میں حکومت کے خلاف جاری جلسوں کی مہم کا جواب پارٹی عوامی طاقت کے اظہار سے دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔

گزشتہ چار برس میں گڑھی خدا بخش میں بینظیر بھٹو کی برسی کے موقعے پر یہ پہلا جلسہ عام ہوگا، اس سے پہلے صدر زرداری بھٹو ہاؤس نوڈیرو کی چار دیواری کے اندر پارٹی کے رہنماؤں اور ارکان اسمبلی سے خطاب کرتے رہے ہیں۔

ان چار برس میں صرف سرکاری نشریاتی اداروں کو کوریج کی اجازت تھی مگر اس بار نجی میڈیا بھی کوریج کرسکتا ہے۔

سندھ کے وزیر اعلیٰ سید قائم علی شاھ نے پیر کو جلسے کی تیاریوں کا جائزہ لیا، ان کا کہنا تھا یہ پنڈال نشتر پارک سے کئی گنا بڑا ہے بقول ان کے کراچی کہ جلسے میں کرائے پر لوگ لائے گئے تھے مگر یہاں عوام رضاکارانہ طور پر آکر بھٹو خاندان سے عقیدت کا اظہار کرتا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ یہ جلسہ عمران خان کے جلسے سے بڑا ہوگا۔

سندھ اور بلوچستان میں برسی کے موقعے پر عام چھٹی کا اعلان کیا گیا ہے، سندھ کی صوبائی حکومت نے قیدیوں کی سزا میں دو ماہ کی چھوٹ دینے کا اعلان کیا ہے، جس کے تحت 775 قیدیوں کو رہا کیا جائے گا۔

صدر آصف علی زرداری لاڑکانہ پہنچ گئے ہیں، جہاں انہوں نے گڑھی خدابخش میں بینظیر بھٹو کی مزار پر حاضری دی ہے۔

برسی میں شرکت کے لیے گلگت بلتستان، آزاد کشمیر اور پنجاب سے قافلے پہنچ چکے ہیں، کراچی سے پیدل اور سائیکل سوار کارکن بھی آئے ہیں۔

برسی کے جلسے کے موقعے پر غیر معمولی سیکیورٹی کے انتظامات بھی کیے گئے ہیں جس کی نگرانی صوبائی وزیر منظور وسان کر رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ چھ ہزار پولیس اہلکار اور رینجرز کے جوان تعینات کیے گئے ہیں جبکہ دو ہیلی کاپٹروں کی مدد سے فضائی نگرانی بھی کی جائےگی۔

آزاد کشمیر کے وزیر اعظم چوہدری عبدالمجید بھی لاڑکانہ پہنچ چکے ہیں، جن کا کہنا تھا کہ کشمیر کے عوام بھی بھٹو خاندان سے عقیدی اور محبت رکھتے ہیں جس کے اظہار کے لیے وہ یہاں آئے ہیں۔

کراچی، حیدرآباد، نوابشاھ سمیت سپر ہائی وے اور نیشنل ہائی وے کے ناکوں پر پیپلز پارٹی کے جھنڈے استقبالیہ کیمپ لگائے گئے ہیں۔ بعض بینروں پر پارٹی کے ناراض رہنما ڈاکٹر ذوالفقار مرزا کی تصویر بھی لگی ہوئی ہے۔

لاڑکانہ شہر کی سڑکوں پر بینظیر بھٹو کی تقاریر اور پارٹی کے نغمے سنے جاسکتے ہیں، کیبل ٹی وی پر بھی ان کی تقاریر اور دستاویزی فلمیں دکھائی جا رہی ہیں۔

اسی بارے میں