خیبر ایجنسی میں طالبان کمانڈر ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں سیکیورٹی فورسز نے ایک کارروائی کی ہے جس میں شدت پسندوں کے اہم کمانڈر سمیت بارہ شدت پسند اور ایک سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہوئے ہیں۔

سرکاری اہلکاروں نے بتایا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے تحصیل لنڈی کوتل کے علاقے کارمینہ میں خفیہ اداروں کی رپورٹ پر آپریش شروع کیا ہے جہاں شدت پسندوں کے ساتھ فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے۔

اہلکاروں نے بتایا کہ مشتبہ طالبان کے خلاف اس کارروائی میں اہم کمانڈر قاری کامران سمیت بارہ شدت پسن ہلاک ہوئے ہیں جبکہ ایک سیکیورٹی اہلکار بھی مارا گیا ہے اور دو زخمی ہوئے ہیں۔

اہلکاروں کا کہنا ہے کہ دو خواتین اور تین بچوں کو بھی شدت پسندوں کی تحویل سے برآمد کر لیا گیا ہے۔

سرکاری ذرائع کے مطابق قاری کامران نوشہرہ ، سرالپور اور سبقدر میں سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھا۔