ملتان سے دو غیر ملکی اغوا کر لیے گئے

سیلاب زدگان
Image caption جن افراد کو اغوا کیا گیا وہ سیلاب زدہ علاقوں میں کام کرنے والی ایک بین الاقوامی غیر سرکاری تنظیم سے وابستہ تھے

پاکستان میں پنجاب کے جنوبی ضلع ملتان میں بین الاقوامی فلاحی تنظیم کے لیے کام کرنے والے دو غیر ملکی باشندوں کو نامعلوم مسلح افراد نےمبینہ طور پر اغوا کر لیا ہے۔

اٹلی کے دفترِ خارجہ نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ اغوا ہونے والا ایک شخص اٹلی کا شہری ہے اور وہ اس کے خاندان سے رابطے میں ہیں۔

غیر سرکاری تنظیم میں کام کرنے والے ایک کارکن کے مطابق جرمنی سے تعلق رکھنے والے مسٹر برنڈ اور اٹلی کے شہری مسٹر جیوانی کو نامعلوم مسلح افراد نے مقامی وقت کے مطابق شام ساڑھے سات بجے ملتان کینٹ سے متصل علاقے قاسم بیلہ میں واقع ویسٹرن فورٹ کالونی کے ایک گیسٹ ہاؤس سے اغواء کیا۔

پینتالیس سالہ مسٹر برنڈ فروری دوہزار گیارہ سے ڈبلیو ایچ ایچ نامی غیر سرکاری تنظیم کے لیے بطور پراجیکٹ ایڈمنسٹریٹر کام کر رہے تھے، جبکہ اطلاعات کے مطابق اٹلی سے تعلق رکھنے والے مسٹر جیوانی ایک روز قبل ہی اسلام آباد سے ملتان پہنچے تھے۔

واردات کے وقت جرمنی سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون کارکن بھی گیسٹ ہاؤس میں موجود تھیں لیکن اغواکار انہیں اپنے ساتھ نہیں لے گئے۔

خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق سی سی پی او ملتان عامر ذوالفقار نے بتایا کہ تین مسلح افراد ایک گھر میں گھس گئے اور وہاں موجود دو غیر ملکیوں کو اغوا کر لیا۔ انہوں نے کہا کہ ابھی تک یہ پتہ نہیں لگایا جا سکا کہ اغوا کا مقصد کیا ہے لیکن ابھی کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہو گا۔ ’ہم تفتیش کر رہے ہیں۔‘

ملتان میں نامہ نگار غضنفرعباس کے مطابق ڈبلیو ایچ ایچ ستمبر دوہزار دس سے ضلع مظفرگڑھ کے سیلاب زدہ علاقوں میں کام کر رہی ہے ۔ معلوم ہوا ہے کہ اس وقت یہ تنظیم تحصیل کوٹ ادو کی تین یونین کونسلوں محمود کوٹ ، ڈوگر کلاسرا، اور ٹھٹھہ گرمانی میں سیلاب زدگان کی بحالی کے لیے مختلف پراجیکٹس پر کام کر رہی ہے۔ دونوں غیر ملکی اغوا سے قبل یونین کونسل محمود کوٹ کی بستیوں موچی والی اور سمندری والا کے دورہ پر تھے۔

ڈبلیو ایچ ایچ میں لگ بھگ چالیس لوگ کام کر رہے ہیں جن میں تین جرمن اور ایک اطالوی باشندہ شامل ہے۔

مقامی پولیس نے اس واقعہ کی تصدیق نہیں کی ہے تاہم سی سی پی او ملتان عامر ذوالفقار کی سربراہی میں پولیس ٹیم جائے وقوعہ پر پہنچی اور پانچ گھنٹے تک اس گیسٹ ہاؤس میں لوگوں سے تفتیش کرتی رہی۔

ڈی سی او ملتان زاہد اختر زمان کے مطابق انھوں نے پولیس سے رپورٹ طلب کر لی ہے تاہم دونوں غیر ملکیوں کی گمشدگی یا اغوا کے حوالے سے حتمی طور پر کچھ نہیں کہا جاسکتا ۔ آخری اطلاع آنے تک پولیس نے اس واقعہ کی رپورٹ درج نہیں کی تھی۔

اسی بارے میں