پشاور: تین جرمن باشندے شہر بدر

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے دارلحکومت پشاور میں غیر قانونی طور رہائش پذیر تین جرمن باشندوں کو شہر بدر کر دیا گیا ہے۔

پشاور میں ایک پولیس آفسر سید آمین جان نے بی بی سی کے نامہ نگار دلاورخان وزیر کو بتایا کہ سنیچر کو یونیورسٹی ٹاؤن پشاور میں پارک روڈ پر واقع ایک بنگلے پر پولیس اور خفیہ اداروں کے اہلکاروں نے چھاپہ مارا جس میں تین جرمن باشندے رہائش پذیر تھے۔

انہوں نے کہا کہ تینوں کو مزید تفتیش کے لیے اسلام آباد بھیج دیا گیا ہے۔

اہلکار نے بتایا کہ جرمن باشندوں کے سفری دستاویزت نامکمل تھے اور وہ پشاور میں غیر قانونی طورپر رہائش پذیر تھے۔

اہلکار کے مطابق وہ اپنی ہی گاڑی میں اسلام آباد روانہ ہوئے ہیں اور ان کے ساتھ پولیس کی کوئی خاص سیکورٹی نہیں بھیجی گئی ہے۔

دریں اثناء قبائلی علاقے کُرم ایجنسی میں ایک بارودی سرنگ کے دھماکے میں ایک اہلکار ہلاک جبکہ دو زخمی ہوئے ہیں۔

مقامی انتظامیہ کے ایک اہلکار کے مطابق وسطی کرم کے علاقے تلئی میں سکیورٹی فورسز کی ایک گاڑی اس وقت ایک بارودی سرنگ سے ٹکرا گئی جب وہ معمول کے گشت پر تھی۔

انہوں نے کہا کہ دھماکے کے نتیجہ میں ایک اہلکار ہلاک جبکہ دو زخمی ہوئے ہیں۔

اسی بارے میں