صحافت پر انسائیکلوپیڈیا

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

کتاب کا نام: آف جرنلزم

مصنف: انعام پشکلاوتی

ناثر: کرسٹل پبلکیشن پشاور

پاکستان اور بالخصوص صوبہ خیبر پختون خوا میں عام طورپر لغت نویسی یا انسائیکلوپیڈیا مرتب کرنے کا رحجان کم ہی دیکھا گیا ہے لیکن اب پشاور یونیورسٹی کے ایک اسسٹنٹ پروفیسر نے صحافت کی ایک چھوٹا سا انسائیکلوپیڈیا مرتب کرکے اس شعبہ میں کام کرنے کی جانب توجہ دلائی ہے۔

تین سو سینتالیس صفحات پر مشتمل اس منی انسائیکلوپیڈیا میں کوشش کی گئی ہے کہ صحافت سے متعلق ان تمام اصطلاحات کو کتاب کی زینت بنایا جاسکے جو عام زندگی میں بھی استعمال ہوتے ہیں۔

اس کتاب میں صحافت کے نو سو اصطلاحات کو بڑے آسان اور سلیس زبان میں بیان کیا گیا ہے۔ مصنف نے کوشش کی ہے کہ عام قاری بھی ان اصطلاحات کو ایسے ہی انداز سے سمجھے جیسے صحافت کا کوئی طالب علم یا استاد سمجھتا ہو۔

کتاب میں صحافت سے متعلق ایک سو ستر مخففات، ایک سو اقتباسات یا کوٹیشنز، دو سو اہم خبررساں اداروں، ایک سو ستر سے زائد اخبارات اور تین درجن سے زائد نامور صحافیوں کے بارے میں معلومات دی گئی ہے جبکہ ان کی مختصر تاریخ بھی بیان کی گئی ہے۔

زیر نظر کتاب میں مصنف نے ابلاغ عامہ کو سمجھنے کےلیے دو درجن سے زائد مشہور ماڈلز اور نظریات کو بھی کتاب کا حصہ بنایا ہے جبکہ اس کے ساتھ ساتھ سب ایڈیٹنگ کی علامات کو بھی مثالوں کے ساتھ شامل کیا گیا ہے۔

اگرچہ انسائیکلوپیڈیا کو مختصر کتابت کی شکل میں شائع کیا گیا ہے اور اس کے صفحات بھی چھوٹے چھوٹے رکھے گئے ہیں لیکن اصطلاحات اور الفاظ کا مطالعہ کرکے اس کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔ بالخصوص اُردو اور انگریزی زبان کے جرائد، اخبارات اور ذرائع ابلاغ میں کام کرنے والے صحافیوں، طالب علموں اور اساتذہ کے لیے اس طرح کا انسائیکلوپیڈیا اتنا ہی ضروری ہے جتنا آج کل کے دور میں کمپیوٹر اور لیپ ٹاپ اہمیت حاصل کر گئے ہیں۔

چونکہ مصنف خود بھی بحثیت صحافی پشاور اور اسلام آباد سے شائع ہونے والے اردو اور انگریزی اخبارات میں کام کرچکے ہیں اسی وجہ سے انہوں نے کتاب میں ان اصطلاحات کو خاص طورپر شامل کیا ہے جو آجکل زیادہ استمعال ہوتے ہیں۔

موجودہ دور میں نجی ٹی وی چینلز کے آنے سے جس طرح پاکستان میں صحافت کی اہمیت بڑھ رہی ہے اور عام شہری بھی اس میں دلچپسی لے رہے ہیں ایسے میں اس قسم کی کتاب کی ضرورت شدت سے محسوس کی جا رہی ہے۔