باڑہ میں چوکی پر حملہ، ایک ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption تحصیل باڑہ کے قریب شلوبر کے علاقے میں فوجی آپریشن جاری ہے

پاکستان کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی کی تحصیل باڑہ میں سکیورٹی فورسز کی چوکی پر حملے میں ایک اہلکار ہلاک اور چار زخمی ہو گئے ہیں۔

مقامی اہلکاروں نے بی بی سی اردو کے عزیز اللہ خان کو بتایا کہ یہ واقعہ جمعرات کو رات گئے پیش آیا۔

اہلکاروں کے مطابق نامعلوم افراد نے رات کے وقت باڑہ میں مسجد کے قریب قائم چوکی پر حملہ کیا جس کے بعد کافی دیر تک دونوں جانب سے فائرنگ کا تبادلہ ہوتا رہا۔

ان کا کہنا تھا کہ اس واقعہ میں ایک اہلکار ہلاک اور چار زخمی ہوئے ہیں جبکہ حملہ آوروں کے نقصان کا علم نہیں ہو سکا۔

یاد رہے تحصیل باڑہ کے قریب شلوبر کے علاقے میں فوجی آپریشن جاری ہے جہاں سے بڑی تعداد میں لوگوں نے نقل مکانی بھی کی ہے۔

ادھر صوبہ خیبر پختونخوا کے جنوبی ضلع ڈیرہ اسماعیل خان میں نامعلوم افراد نے لڑکیوں کے ایک سرکاری مڈل سکول میں دھماکہ کیا ہے۔

مقامی لوگوں نے بتایا ہے کہ دھماکے سے سکول کی عمارت کے تین کمروں کو کافی نقصان پہنچا ہے۔

ڈیرہ اسماعیل خان جیسے شہری علاقے میں کسی سکول پر یہ پہلا حملہ ہے۔

پاکستان کے قبائلی علاقوں اور صوبے کے دیگر مقامات پر سکولوں پر حملے ہوتے رہے ہیں لیکن اب ان کی شدت میں اضافہ ہوا ہے اور کچھ عرصہ سے شہری سکولوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ قبائلی علاقوں اور خیبر پختونخوا میں ایک اندازے کے مطابق نو سو کے لگ بھگ سکولوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

اسی بارے میں