سیاچن موقف میں تبدیلی نہیں: پاکستان

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption پاکستان کا کہنا ہے کہ بھارت نے مزائل تجربوں کے بارے میں طے شدہ طریقہِ کار پر عمل کیا ہے۔

پاکستان نے کہا ہے کہ بھارت نے جوہری ہتھیار لے جانے والے بین البراعظمی بلسٹک میزائل اگنی (پانچ) کا تجربہ کرنے سے پہلے آگاہ کیا تھا اور اس سے متعلق طے شدہ طریقہِ کار پر عمل کیا ہے۔

یہ بات دفترِ خارجہ کے ترجمان معظم احمد خان نے ہفتہ وار بریفنگ کے دوران ایک سوال کے جواب میں بتائی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان معاملات سے متعلق پاکستان اور بھارت کے درمیان جو طریقہِ کار ہے، بھارت نے اس پر عمل کیا ہے اور وہ پاکستان کے موقف کو بھی بخوبی جانتا ہے۔

نامہ نگار حفیظ چاچڑ کے مطابق سیاچن کے مسئلے پر بات کرتے ہوئے معظم احمد خان نے کہا کہ سیاچن پر پاکستان کی پالیسی اور موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان بھارت کے ساتھ تمام مسائل کا حل چاہتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان چاہتا ہے کہ دونوں ممالک کی فوجیں سیاچن میں ان پوزیشن پر چلی جائیں، جہاں وہ 1984 سے پہلے تعینات تھیں۔

یاد رہے کہ میاں نواز شریف نے حال ہی میں پاکستانی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ سیاچن سے فوجوں کے انخلاء میں پہل کرے جبکہ آرمی چیف جنرل اشفاق کیانی نےگزشتہ روز صدر آصف علی زرداری کے ساتھ سیاچن کے دورے پر اس مسئلے کے حل پر روز دیا۔

اسی بارے میں