اسلام آباد: جائے حادثہ، دن کے مناظر

اسلام آباد کے نواحی علاقے حسین آباد میں جائے حادثہ پر سنیچر کی صبح امدادی کارروائیاں دوبارہ شروع کی دی گئی۔

پاکستانی فوج کے اہلکاروں نے جائے حادثہ کو گھیرے میں لے رکھا ہے اور امدادی کارکن وسیع علاقے میں پھیلے ہوئے طیارے اور اس میں سوار افراد کے ٹکڑوں کو جمع کررہے ہیں۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی نے طیارہ حادثے سے متعلق تحققات شروع کردی ہیں اور جائے حادثہ سے شواہد اکھٹے کرنا شروع کردیے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ ملبے کو اُس وقت نہیں ہٹایا جائے گا جب تک شہادتیں اکھٹی کرنے کا عمل مکمل نہیں ہوجاتا۔

گروپ کیپٹن مجاہدالاسلام کو اس واقعہ کی تحقیقات کرنے والی ٹیم کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔

جائے حادثہ پر فوج کے جوانوں کو تعینات کیا گیا ہے اور کسی کو بھی وہاں پر جانے کی اجازت نہیں دی جارہی۔