کوئٹہ میں بم دھماکہ، چار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption کوئٹہ میں حالیہ چند ماہ کے دوران متعدد دھماکے ہو چکے ہیں

بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں ہونے والے ایک ریمورٹ کنٹرول بم دھماکے میں ایف سی کے اہلکاروں سمیت چار افراد ہلاک اور چودہ زخمی ہوگئے ہیں۔

کوئٹہ میں ایف سی کے ذرائع نے نامہ نگار ایوب ترین کو بتایا کہ مرنے والوں میں فرنٹیئر کور کے دو اہلکار اور ایک خاتون سمیت دو عام شہری ہلاک ہوئے ہیں۔

حکام کے مطابق زخمیوں میں آٹھ سکیورٹی اہلکاروں کے علاوہ خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

یہ دھماکہ پیر کی شام کوئٹہ ایئرپورٹ روڈ پر عالمو چوک کے مقام پر اس وقت ہوا جب فرنٹیئرکور کی گاڑیاں وہا ں سے گزر رہی تھی۔

پولیس کے مطابق نامعلوم افراد نے سڑک کے کنارے نصب کھڑی گاڑی میں نصب ایک ریمورٹ کنٹرول بم سے ایف سی کی گاڑیوں کو نشانہ بنایا ہے جس سے ایف سی کی دوگاڑیاں تباہ ہو گئی ہیں۔

دھماکے سے جائے حادثہ کے قریب واقع بارہ دکانیں اور عام لوگوں کی کئی گاڑیاں بھی تباہ ہوئی ہیں جبکہ آس پاس موجود کئی دفاتر اور گھروں کے شیشے ٹوٹ گئے۔ دھماکہ اتنا زوردار تھا کہ پورے شہر میں اس کی آوازسنی گئی جس سے شہریوں میں خوف وہراس پھیل گیا۔

واقعے کے فوراً بعد ہلاک ہونے والوں کی لاشوں اور زخمی ہونے والے افراد کو فوری طور پر ملٹری کمبائنڈ ہسپتال اور سول ہسپتال کوئٹہ منتقل کر دیا گیا ہے۔

دھماکے کے بعد پولیس اور فرنٹیئر کور کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی اور علاقے کی ناکہ بندی کر دی۔

دھماکے کے بعد پولیس نے نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کرکے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

اسی بارے میں