خیبر ایجنسی:این جی او کی خاتون رکن قتل

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption قبائلی علاقے سے تعلق رکھنے کی وجہ سے وہ باقاعدہ پردے میں دفتر آتی جاتی تھیں۔

پاکستان کے قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں حکام کا کہنا ہے کہ خواتین کے حقوق کےلئے سرگرم ایک مقامی غیر سرکاری تنظیم سویرا کی نوجوان خاتون مینیجر کو مسلح افراد نے فائرنگ کرکے ہلاک کردیا ہے۔

سرکاری اہلکاروں نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ واقعہ بدھ کی صبح خیبر ایجنسی کے علاقے جمرود تحصیل میں پیش آیا۔

انہوں نے کہا کہ مقامی غیر سرکاری تنظیم سویرا کی ایچ آر مینیجر فریدہ آفریدی گھر سے پشاور کے علاقے حیات آباد میں واقع اپنے دفتر جارہی تھی کہ راستے میں ہی نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے ان پر اندھا دھند فائرنگ کردی جس سے وہ ہلاک ہوگئیں۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے حملہ آوار دو تھے جو قتل کے بعد فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔

سویرا تنظیم کے اہلکاروں کا کہنا ہے کہ فریدہ کو کچھ عرصہ سے نامعلوم افراد کی طرف سے ٹیلی فون پر قتل کی دھمکیاں مل رہی تھیں لیکن انہوں نے ان دھمکیوں کو کبھی سنجیدہ نہیں لیا بلکہ وہ اکثر کہا کرتی تھیں کہ شاید ان کے خاندان کے کچھ افراد ان پر دباؤ ڈالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ تاہم ابھی تک کسی تنظیم نے اس قتل کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

سویرا نامی یہ تنظیم قبائلی علاقوں میں خواتین کی تعلیم و تربیت کےلیے سرگرم ادارے ’ویمن لیڈ‘ کا حصہ بتائی جاتی ہے ہے۔

یادرہے کہ خیبرایجنسی میں اس سے پہلے بھی غیر سرکاری تنظیموں کے اہلکاروں کو نشانہ بنایا جاچکا ہے جس میں انسانی حقوق کےلئے کام کرنے والے کارکن بھی ہلاک کئے گئے تھے۔

فریدہ آفریدی قبائلی علاقوں میں خواتین کی تعلیم و تربیت اور حقوق کےلیے سرگرم غیر سرکاری تنظیم سویرا کی ہیومن رسورس منیجر تھیں۔ ان کا تعلق سویرا تنظیم کے بانی رہنماؤں میں ہوتا تھا۔ چوبیس سالہ فریدہ آفریدی جمرود کے ایک پسماندہ علاقے غنڈی مندتو کلی سے تعلق رکھتی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ فریدہ کو بچپن ہی سے خواتین کی حقوق کےلیے کام کرنے کا شوق تھا اور یہی وجہ ہے کہ وہ سکول کے زمانے سے سویرا تنظیم سے منسلک ہوگئی تھیں۔

انہوں نے علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی سے جنڈر سٹڈیز میں ماسٹر ڈگری حاصل کی تھی۔ فریدہ کا شمار اپنے علاقے کے چند تعلیم یافتہ خواتین میں ہوتا تھا۔ قبائلی علاقے سے تعلق رکھنے کی وجہ سے وہ باقاعدہ پردے میں دفتر آتی جاتی تھیں۔ وہ غیر شادی شدہ بھی تھی۔

اسی بارے میں