ملتان کے ضمنی انتخاب میں گیلانی کی جیت

عبدالقادر گیلانی تصویر کے کاپی رائٹ Other
Image caption نومنتخب رکن قومی اسمبلی عبدالقادر گیلانی کے بھائی علی موسیٰ گیلانی کچھ عرصہ قبل ہی ضمنی انتخابات میں رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے تھے

پاکستان میں غیر سرکاری نتائج کے مطابق ملتان میں سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کی نا اہلی کے بعد خالی ہونے والی نشست کے لیے ہونے والے ضمنی انتخاب میں ان کے صاحبزادے کامیاب ہو گئے ہیں۔

قومی اسمبلی کے حلقہ نمبر ایک سو اکیاون کی اس نشست کے لیے پی پی پی کے عبدالقادر گیلانی اور آزاد امیدوار شوکت حیات بوسن کے درمیان مقابلہ تھا۔

پاکستانی ذرائع ابلاغ کے مطابق عبدالقادر جیلانی نے چونسٹھ ہزار چھ سو اٹھائیس ووٹ لیے جب کے ہارنے والے امیدوار کو ساٹھ ہزار پانچ سو بتیس ووٹ ملے۔ شوکت حیات بوسن کو مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی کی حمایت حاصل رہی۔

ملتان کے اس حلقہ میں یوسف رضا گیلانی کے روایتی حریف اور سابق وفاقی وزیر سکندر حیات خان بوسن نے تحریک انصاف میں شامل ہونے کی وجہ سے ضمنی انتخاب میں حصہ نہیں لیا، تاہم ان کی جگہ ان کے بھائی آزاد امیدوار کے طور پر میدان میں تھے۔

مسلم لیگ نون نے ان ضمنی انتخابات میں اپنے امیدوار کھڑا کرنے کی بجائے آزاد امیدوار شوکت حیات بوسن کی حمایت کا اعلان کیا۔ مسلم لیگ نون کے طرف سے سابق رکن پنجاب اسمبلی اسحاق بچہ نےکاغذات جمع کرائے تھے لیکن دوبارہ پیپلزپارٹی میں شامل ہوگئے۔

پاکستان کے الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کردہ نئے انتخابی ضابطۂ اخلاق کے تحت ہونے والا یہ پہلا الیکشن تھا۔

اسی بارے میں