رمضان بارار: ٹول فری ہیلپ لائن

بازار تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption لوگ بازاروں میں اشیاء کی معیاری قیمتوں، وزن، دکانداروں کے رویے سے متعلق شکایات درج کروا سکتے ہیں ـ

لاہور میں ضلعی حکومت نے رمضان بازاروں میں گراں فروشی اور ذخیرہ اندوزی سے متعلق شکایات کے لیے ٹول فری ہیلپ لائن قائم کردی ہےـ

ذمہ دار شہری کے نام سے قائم کی گئی ہیلپ لائن 02345-0800 پر شہری چوبیس گھنٹے رمضان بازاروں میں اشیاء کی معیاری قیمتوں، وزن، دکانداروں کے رویے اور بازاروں میں کیے گئے انتظامات سے متعلق شکایات درج کروا سکتے ہیں ـ

لاہور کے ڈی سی انورالامین مینگل نے بی بی سی کی نامہ نگار شمائلہ جعفری کو بتایا کہ پہلے ہی روز ہیلپ لائن پر ایک ہزار کالز موصول ہوئیں جن میں سے چھ سو کالز پر صارفین نے ہیلپ لائن سے متعلق معلومات حاصل کیں جبکہ چار سو کالز پر شکایات درج کروائی گئیں انہوں نے کہا کہ تین سو شکایات کا ازالہ کر دیا گیا ہےـ

پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ اس منصوبے کے لیے تکنیکنی معاونت فراہم کر رہا ہے۔

ہیلپ لائن کے لیے فی الوقت دس فون لائنیں مختص کی گئی ہیں۔ شکایت رجسٹر ہونے کے بعد شکایت کرنے والے شخص اور متعلقہ افسر کو ایس ایم ایس بھیج دیا جائے گا

شکایت کے ازالے کے لیے متعلقہ اہلکار کوتین دن کی مہلت دی جائے گی جس کے بعد ازالہ نہ ہونے کی صورت میں متعلقہ اہلکار کے خلاف کاروائی کی جائی گی۔

ڈی سی او کا کہنا ہے کہ وہ روزمرہ مسائل سے متعلق عوامی شکایات اور ایک جامع نظام وضع کرنے کی کوشیش کی جا رہی ہے۔

رمضان کے بعد ہیلپ لائن کا دائرہ کار مزید بڑھا دیا جائے گا تاکہ لوگوں کو اپنی مشکلات کے لیے ہر وقت سرکاری دفاتر کے چکر نہ کاٹنے پڑیں لیکن اس کے لیے محکمے کی استعداد کو بڑھانے کی ضرورت ہےـ

صارفین کی بڑی تعداد ابھی اس ہیلپ لائن سے واقف نہیں۔ رمضان بازار میں خریداری کرنے والے امتیاز کا کہنا ہے کہ ہیلپ لائن کامقصد ووٹ لینا ہے۔ عوام شکایت کرنا ہی نہیں چاہتی کیونکہ ہم جانتے ہیں کہ کچھ ہی شکایتوں پر ایکشن لیا جائے گا اور پھر سب کچھ ویسے ہی چھوڑ دیا جائے گا۔جبکہ کچہ صارفین نے ہیلپ لائن کا خیرمقدم کیا ہے۔

اسی بارے میں