’قانون سازی کے حق پر سمجھوتہ نہیں کریں گے‘

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اجلاس میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کے مسئلے پر بھی بات کی گئی

پاکستان میں حکمران جماعت پیپلز پارٹی اور اس کی اتحادی جماعتوں نے ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں فیصلہ کیا ہے کہ پارلیمان کے قانون سازی کے آئینی حق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

پاکستان کی سپریم کورٹ کی جانب سے توہین عدالت کے نئے قانون کو منسوخ کرنے کے حکم کے بعد ایوان صدر اسلام آباد میں صدر آصف علی زرداری اور وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کی سربراہی میں اتحادی جماعتوں کے رہنماؤں کا اجلاس منعقد ہوا۔

خیال رہے کہ جمعہ کو سپریم کورٹ نے موجودہ پارلیمنٹ کی طرف سے بنائے گئے توہین عدالت کے نئے قانون کو کالعدم قرار دے دیا تھا۔

سپریم کورٹ نے توہین عدالت کا قانون کالعدم قرار دے دیا

پاکستان کے سرکاری ٹیلی ویژن پی ٹی وی کے مطابق اجلاس میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ آئین کے تحت قانون سازی پارلیمینٹ کا حق ہے، اس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا اور موجودہ صورتحال میں تمام چیلنجز کا مل کر مقابلہ کیا جائے گا۔

اجلاس میں مسلم لیگ قاف کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین، عوامی نیشنل پارٹی کے حاجی عدیل، افراسیاب خٹک، متحدہ قومی موومنٹ کے ڈاکٹر فاروق ستار اور دیگر نے شرکت کی۔

پاکستان کے سرکاری ٹی وی چینل کے مطابق اجلاس میں ملک کی مجموعی صورتحال اور توانائی کے بحران کے غور کیا گیا اور وزیر اعظم نے شرکاء کو بجلی کی کمی پر قابو پانے کے لیے کیے جانے والے اقدامات پر بریفنگ بھی دی۔

حکومت کے اس بیان سے لگتا ہے کہ وہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف آئینی اور قانونی راستے اختیار کر سکتی ہے جس کے لیے اسے یا تو سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل میں جانا ہوگا یا پھر پارلیمینٹ کے ہی ذریعے توہین عدالت کا نیا قانون لانا ہوگا۔

اس سے پہلے جمعہ کو سپریم کورٹ نے موجودہ پارلیمنٹ کی طرف سے بنائے گئے توہین عدالت کے نئے قانون کو کالعدم قرار دیتے ہوئے دو ہزار تین کے توہینِ عدالت کے قانون کو بحال رکھنے کا حکم دیا ہے۔

عدالت کا کہنا ہے کہ توہین عدالت کا پُرانا قانون بارہ جولائی سے ہی نافذ العمل ہوگا جس دن سے توہین عدالت کا نیا قانون لاگو کیا گیا تھا۔

جمعہ کو نئے قانون کے خلاف دائر درخواستوں پر مختصر فیصلے میں سپریم کورٹ کے پانچ رکنی بینچ نے کہا ہے کہ اس قانون میں جو بھی ترامیم کی گئی ہیں وہ پاکستان کے آئین سے متصادم ہیں۔

اسی بارے میں