ریڈ کراس کی سرگرمیاں محدود پیمانے پر بحال

آخری وقت اشاعت:  منگل 28 اگست 2012 ,‭ 14:05 GMT 19:05 PST

اپریل میں آئی سی آر سی کے اہلکار کی ہلاکت کے بعد سے ریڈ کراس کی سرگرمیاں معطل تھیں

بین الاقوامی امدادی تنظیم ریڈ کراس (آئی سی آر سی) نے پاکستان میں تنظیم کی سرگرمیوں اور اسے درپیش خطرات کا جامع جائزہ لینے کے بعد ملک میں امدادی سرگرمیاں محدود پیمانے پر جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

منگل کو تنظیم کی جانب سے جاری کردہ بیان میں پاکستان میں آئی سی آر سی کے سربراہ پال کسٹیلا نے کہا ہے کہ اگر ان کے عملے کو مناسب حالاتِ کار میسر ہوں تو وہ ضرورت مند افراد کی مدد کے لیے تیار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ’آنے والے ہفتوں میں آئی سی آر سی پاکستانی حکام کے تعاون اور صورتحال کی موافقت سے بدتریج اپنی سرگرمیاں دوبارہ شروع کرے گی‘۔

انہوں نے بتایا کہ اس سلسلے میں پشاور میں قائم وہ سرجیکل ہسپتال بھی دوبارہ کھول دیا جائے گا جسے آئی سی آر سی کے اہلکار ڈاکٹر خلیل ڈیل کی ہلاکت کے بعد بند کر دیا گیا تھا۔

بیان کے مطابق آئی سی آر سی نے بلوچستان، خیبرپختونخوا اور قبائلی علاقہ جات میں متاثرہ افراد کے لیے دیگر تمام سرگمریاں بند کرنے کا اعلان کیا ہے جبکہ پاکستان میں تنظیم کی جانب سے جیلوں کے دورے اور سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں بحالی کے لیے کوئٹہ اور صوبہ سندھ میں قائم کیے گئے دفاتر بند کیے جا رہے ہیں۔

پال کسٹیلا کا کہنا تھا کہ ’ان فیصلوں سے کچھ علاقوں میں ضرورت مند افراد متاثر ہوں گے لیکن ہمیں اپنے سٹاف کو درپیش چیلنجز کے پیشِ نظر اپنی سرگرمیوں پر نظرِ ثانی کرنی پڑی ہے‘۔

رواں برس اپریل میں ریڈ کراس کے ہیلتھ پروگرام منیجر خلیل رسجد ڈیل کی پاکستان میں ہلاکت کے بعد امدادی تنظیم نے پاکستان میں تنظیم کی موجودگی پر نظرِ ثانی کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے تنظیم کی سرگرمیاں معطل کر دی تھیں۔

ڈاکٹر خلیل ڈیل کو پانچ جنوری دو ہزار بارہ کو کوئٹہ سے نامعلوم افراد نے اغواء کیا تھا بعد میں طالبان نے اس کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے ان کی بازیابی کے لیے دس کروڑ روپے تاوان طلب کیا تھا۔ تاہم انتیس اپریل کو ان کی لاش کوئٹہ سے برآمد ہوئی تھی۔

خلیل ڈیل کے اغوا کے بعد نہ صرف آئی سی آر سی بلکہ دیگر بین الاقوامی تنظیموں نے بھی پاکستان میں اپنی امدادی سرگرمیاں کم کر دی تھیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔