’کسی امن کمیٹی یا لشکر کا حصہ نہ بنیں‘

آخری وقت اشاعت:  منگل 28 اگست 2012 ,‭ 13:38 GMT 18:38 PST
طالبان

طالبان نے یہ پمفلٹ گذشتہ دنوں لکی مروت میں اباخیل اور تاجہ زئی میں تقسیم کیے ہیں

صوبہ خیبر پختونخواہ کے جنوبی ضلع لکی مروت کے بعض دیہات میں طالبان کی جانب سے ایسے پمفلٹ تقسیم کیے گئے ہیں جن میں مقامی لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ کسی قسم کا کوئی قومی لشکر یا امن کمیٹی کی طرح کی تنظیم نہ تشکیل دیں اور نہ ہی ایسے کسی گروپ کا حصہ بنیں۔

یہ پمفلٹ گذشتہ دنوں کالعدم تنظیم تحریکِ طالبان پاکستان کے حلقہ لکی مروت کی جانب سے اباخیل اور تاجہ زئی میں تقسیم کیے گئے ہیں۔

پمفلٹ میں لکی مروت کے عوام کے نام پیغام دیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وہ امن لشکر، امن کمیٹی یا چغہ کے نام سے کسی بھی گروپ میں شمولیت یا تشکیل سے گریز کریں۔

نامہ نگار عزیز اللہ خان کے مطابق مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ ماضی میں لکی مروت میں ’مروت قومی لشکر‘ کے نام سے ایک تنظیم تشکیل کی گئی تھی جو بنیادی طور پر اغوا کاروں اور جرائم پیشہ افراد کے خلاف تھی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس جرگے پر طالبان نے اعتراض کیا تھا۔ بعد میں اس کا نام تبدیل کرکے ’مروت قومی گرینڈ جرگہ‘ رکھ دیا گیا تھا۔ اس جرگے کے امیر مولانا محسن شاہ کو گذشتہ ماہ نامعلوم افراد نے ان کے مدرسے میں قتل کر دیا تھا۔

اس جرگے کے موجودہ سربراہ اسلم خان کا کہنا ہے کہ یہ جرگہ جرائم پیشہ افراد اور ان تمام افراد کے خلاف ہے جو مروت قوم یا علاقے کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انہیں کسی جانب سے کسی نے اس بارے میں کچھ نہیں کہا ہے ۔ اسلم خان نے بتایا کہ یہ پمفلٹ کچھ عرصہ پہلے تقسیم کیے گئے تھے۔

ضلع لکی مروت میں چند ماہ پہلے سکولوں میں دھماکے کیے گئے تھے جن کی ذمے داری تحریک طالبان لکی مروت کے ترجمان نے قبول کی تھی، جب کہ سکولوں پر حملوں کی کچھ کوششوں کو مقامی پولیس نے ناکام بنا دیا تھا۔

لکی مروت کے علاقے شاہ حسن خیل میں یکم جنوری سن دو ہزار دس میں والی بال میچ کے دوران گاڑی میں بارود بھر کر دھماکا کیا گیا تھا جس میں ایک سو کے لگ بھگ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔