’سانحۂ کراچی پر تحقیقاتی کمیشن بنایا جائے‘

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 13 ستمبر 2012 ,‭ 13:54 GMT 18:54 PST

کراچی میں ہولناک آتش زدگی میں جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین ماتم کناں ہیں۔

پاکستان کی قومی اسمبلی نے کراچی اور لاہور میں آگ لگنے سے سینکڑوں افراد کی ہلاکتوں پر سخت تشویش ظاہر کرتے ہوئے اُسے قومی سانحہ قرار دیا ہے اور اس کی جانچ کے لیے صوبائی حکومتوں سے سفارش کی ہے کہ تحقیقات کے لیے عدالتی کمیشن بنائے جائیں۔

اس بارے میں جمعرات کو قومی اسمبلی میں قواعد معطل کرکے بحث کی گئی اور اتفاقِ رائے سے ایک قرارداد منظور کی گئی۔

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ کوتاہی برتنے پر فیکٹری مالکان اور متعلقہ سرکاری محکموں کے ذمے دار افسران کے خلاف کارروائی کی جائے۔

وزیرِ قانون فاروق نائیک کی پیش کردہ قرارداد میں کہا گیا ہے کہ عدالتی کمیشن اس بات کا تعین کرے کہ آگ لگنے کے واقعات کیسے ہوئے، فیکٹری مالکان ملازمین اور عمارتوں میں سہولیات فراہم کرنے کے لیے قوانین پر عمل کر رہے ہیں کہ نہیں۔

قرارداد میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ جو سرکاری ملازمین متعلقہ قوانین پر عمل کرانے میں ناکام ہوئے ہیں ان کی نشاندہی کر کے انہیں کے خلاف کارروائی کی جائے اور ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے قانونی کارروائی کی جائے۔

کمیشن سے کہا گیا ہے کہ وہ قوانین کا جائزہ بھی لیں اور اگر ضروری ہو تو قانون سازی کے لیے سفارشات بھی مرتب کی جائیں تاکہ اس طرح کے واقعات سے مستقبل میں بچا جاسکے۔

کراچی آتش زدگی

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ عدالتی کمیشن اس بات کا تعین کرے کہ آگ کیسے لگی اور فیکٹری مالکان حفاظتی قوانین پر عمل کر رہے ہیں کہ نہیں۔

قرارداد میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ متعلقہ صوبائی حکومتیں آگ کے دونوں واقعات میں ہلاک اور زخمی ہونے والوں کو معاوضہ دیں۔

یہ قرارداد ایوان میں ہونے والی بحث کے دوران پیش کی گئی تجاویز کی روشنی میں تیار کی گئی جس کی اپوزیشن لیڈر چوہدری نثار علی خان نے بھی حمایت کی اور کہا کہ یہ مناسب قرارداد ہے۔

قبل ازیں بحث کے دوران کئی اراکین نے خدشہ ظاہر کیا کہ حکومت قرارداد پر عمل درآمد کو یقینی بنائے اور ایسا نہ ہو کہ اس قرارداد کا حشر بھی ماضی میں منظور ردہ قراردادوں جیسا ہو۔

کچھ اراکین نے کہا کہ حمود الرحمٰن کمیشن کی رپورٹ پر عمل ہوتا تو آج پاکستان میں صورتحال مختلف ہوتی۔ کچھ اراکین نے کہا کہ ٹریڈ یونینز کو مضبوط کیا جائے تاکہ وہ قوانین پر عملدرآمد کرانے میں اہم کردار ادا کرسکیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔