پشاور: متنازع فلم کے خلاف مظاہرے جاری

آخری وقت اشاعت:  منگل 18 ستمبر 2012 ,‭ 16:48 GMT 21:48 PST

پولیس نے مظاہر ین کو منتشر کرنے کے لیے ہوائی فائرنگ کی

پاکستان کے مختلف شہروں میں پیغمبرِ اسلام کے بارے میں امریکہ میں بننے والی توہین آمیز فلم کے خلاف شدید احتجاجی مظاہرے جاری ہیں۔

پشاور میں منگل کو امریکی قونصل خانے کے سامنے مظاہرین نے پتھراؤ کیا جس کے جواب میں پولیس نے ہوائی فائرنگ کی اور آنسو گیس کے شیل پھینکے۔

پشاور میں احتجاج کے لیے بیشتر تنظیمیوں نے امریکی قونصل خانے کے سامنے پہنچنا تھا۔ خیبر میڈیکل یونیورسٹی کے طلباء اور طالبات تین سے چار کلومیٹر کا فیصلہ طے کرکے امریکی قونصل خانے کے سامنے پہنچے جہاں انھوں نے نعرہ بازی کی اور پھر پر امن طور پر منتشر ہو گئے۔

پشاور میں چوک یادگار سے پہنچنے والی مختلف تنظیموں کی ریلی نے امریکی قونصل خانے کے سامنے شدید احتجاج اور پتھراؤ کیا۔

نامہ نگار عزیز اللہ خان کے مطابق مظاہرین نے بینرز اور امریکی پرچم والے ایک اشتہاری بورڈ کو آگ لگا دی۔

ریلی میں شباب ملی اور جماعت اسلامی کے علاوہ دیگر تنظیموں کے کارکن بھی شامل تھے۔

پولیس نے مظاہر ین کو منتشر کرنے کے لیے ہوائی فائرنگ اور آنسو گیس کے شیل پھینکے۔

اس کے علاوہ پشاور پریس کلب کے سامنے پاسبان تنظیم کے کارکنوں نے کفن پوش احتجاجی مظاہرہ کیا اور ذمہ دار افراد کو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا۔

صوبے کے دیگر علاقوں میں بھی احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔ اپر دیر میں منگل کو سرکاری دفاتر بند رہے۔

مظاہرین نے مختلف راستے بلاک کیے رکھے اور امریکہ کے خلاف سخت نعرہ بازی کی۔ ڈیرہ اسماعیل خان بھی احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔