’خواتین نے ووٹ نہ ڈالا تو دوبارہ الیکشن‘

آخری وقت اشاعت:  بدھ 26 ستمبر 2012 ,‭ 13:33 GMT 18:33 PST

پاکستان کے الیکشن کمیشن نے عام انتخابات میں کسی حلقے میں خواتین کے دس فیصد سے کم ووٹ ڈالنے کی صورت میں وہاں دوبارہ انتخاب کروانے کی تجویز دی ہے۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق اس تجویز پر مشتمل بِل بدھ کو چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) فخرالدین جی ابراہیم کی زیرِ صدارت منعقدہ اجلاس میں پیش کیا گیا۔

بیان کے مطابق کمیشن کے ارکان نے متفقہ طور پر اس بل کی منظوری دی جسے اب وزارتِ قانون کو بھیجا جار ہا ہے تاکہ وہ اسے قانون سازی کے لیے پارلیمان کو بھیج سکے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ اس بل کا مقصد انتخابی عمل میں خواتین کی شرکت یقینی بنانا اور کسی مخصوص علاقے میں امیدواروں، جماعتوں یا گروہوں کی جانب سے اتفاقِ رائے سے خواتین کو پولنگ سے روکنے کے واقعات کی حوصلہ شکنی کرنا ہے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق اس اجلاس میں بیرونِ ملک مقیم پاکستانیوں کو ووٹنگ کا حق دینے کا معاملہ بھی زیرِ بحث آیا اور اب اس پر ستائیس ستمبر کو سیاسی جماعتوں سے مشاورتی اجلاس میں بات ہوگی۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔