پاکستان کی اقتصادی شرح نمو میں اضافہ

آخری وقت اشاعت:  بدھ 3 اکتوبر 2012 ,‭ 12:52 GMT 17:52 PST

ایشیائی ترقیاتی بینک نے رواں برس پاکستانی معیشت کی ممکنہ ترقی کے متعلق اپنا اندازہ تین اعشاریہ چھ فیصد سے بڑھاکر تین اعشاریہ سات فیصد کردیا ہے۔

پاکستان کی سرکاری خبر رساں ادارے اے پی پی کے مطابق بینک نے اپریل میں سنہ دو ہزار بارہ کے دوران پاکستانی معیشت کی شرح نمو تین اعشاریہ چھ فیصد رہنے کا اندازہ ظاہر کیا تھا لیکن اب بینک نے ایشیائی معیشت کی ممکنہ ترقی کے متعلق اپنے تازہ ترین جائزے میں کہا ہے کہ پاکستان کی شرح نمو اس سال تین اعشاریہ سات فیصد تک ہوسکتی ہے۔

تاہم بینک نے اگلے سال یعنی سنہ دو ہزار چودہ کے دوران بھی پاکستان کی شرح نمو تین اعشاریہ سات ہی رہنے کا امکان ظاہر کیا ہے جو چار فیصد تک رہنے کی پیش گوئی کی گئی تھی۔

بینک نے بھارتی معیشت کے بارے میں اپنی پیش گوئی میں کہا ہے کہ پچھلے سال سنہ دو ہزارگیارہ میں چھ اعشاریہ پانچ فیصد کے مقابلے سنہ دو ہزار بارہ اور سنہ دو ہزار تیرہ میں بھارت کی شرح نمو پانچ اعشاریہ چھ فیصد تک رہنے کا امکان ہے۔

ایشیائی ترقیاتی بینک کا یہ بھی کہنا ہے کہ یورپی ملکوں کے قرضوں کے بحران اور امریکہ کی مالی مشکلات کے تباہ کن اثرات باقی ماندہ دنیا خاص طور پر ترقی پذیر ایشیائی ملکوں پر بھی پڑ سکتے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔