بڈھ بیر:شدت پسندوں سے جھڑپ، ایک اہلکار ہلاک

آخری وقت اشاعت:  اتوار 14 اکتوبر 2012 ,‭ 11:10 GMT 16:10 PST
فرئنٹر کانسٹبلری

ایسی اطلاعات ملی ہیں کہ جوابی کاروائی میں پانچ شدت پسند ہلا ہوئے لیکن سرکاری سطح پر اس کی تصدیق نہیں ہوئی ہے

پشاور کے مضافاتی علاقے بڈھ بیر میں فرنٹیئر کانسٹبلری اور شدت پسندوں کے مابین جھڑپ میں ایک اہلکار اور ایک شدت پسند ہلاک جبکہ چار شدت پسند زخمی ہوئے ہیں۔

یہ واقعہ اتوار کی صبح اس وقت پیش آیا جب بڈھ بیر میں باڑہ شیخان کے قریب فرنٹیئر کانسٹبلری کے اہلکار جھاڑیوں کی صفائی کی نگرانی کر رہے تھے۔

پشاور پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ یہ مقام قبائلی علاقے کی سرحد کے قریب ہے اور اکثر شدت پسند تشدد کی کارروائیاوں کے بعد ان بڑھی ہوئی جھاڑیوں کی آڑ میں فرار ہو جاتے تھے۔

پولیس کے مطابق ان جھاڑیوں کی صفائی کے دوران شدت پسندوں نے فرنٹیئر کانسبلری کے اہلکاروں پر فائرنگ کی ہے جس سے ایک اہلکار ایاز ہلاک ہوا ہے ۔

پولیس اہلکار نے بتایا کہ جوابی کارروائی میں ایک شدت پسند ہلاک اور چار زخمی ہوئے ہیں لیکن شدت پسند فرار ہوتے وقت موقع واردات سے لاش اور زخمیوں کو ساتھ لے گئے ہیں۔

ایسی اطلاعات بھی ہیں کہ جوابی کارروائی میں پانچ شدت پسند ہلاک ہوئے ہیں لیکن سرکاری سطح پر اس کی تصدیق نہیں ہو سکی۔

بڈھ بیر کے علاقے میں کچھ عرصے سے تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔ گزشتہ ماہ بڈھ بیر کے قریب سکیم چوک پر ایک دھماکے میں دس افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔