کراچی:موٹرسائیکل پر پابندی کی مشروط اجازت

آخری وقت اشاعت:  منگل 20 نومبر 2012 ,‭ 09:15 GMT 14:15 PST

کراچی میں لوگوں کی بڑی تعداد موٹر سائیکل استعمال کرتی ہے۔

سندھ ہائی کورٹ کے ایک بینچ نے کراچی میں سکیورٹی خدشات کی بناء پر موٹرسائیکل چلانے پر پابندی لگانے کی مشروط اجازت دے دی ہے۔

چیف جسٹس مشیر عالم اور جسٹس شفیع صدیقی پر مشتمل بینچ نے حکم دیا ہے کہ عام تعطیل کے موقع پر، مجالس یا ماتمی جلوس والے علاقوں یا انتہائی ہنگامی حالات کی صورت میں حکومت موٹرسائیکل چلانے پر پابندی عائد کرسکتی ہے۔

یاد رہے کہ سندھ حکومت نے موٹر سائیکل چلانے پر پابندی کا نوٹیفیکشن معطل کرنے کے خلاف یہ درخواست دائر کی تھی۔

ہمارے نامہ نگار کے مطابق محکمۂ داخلہ کے ایڈیشنل چیف سیکریٹری وسیم احمد نے درخواست میں موقف اختیار کیا تھا کہ انٹیلی جنس اداروں نے اپنی رپورٹوں میں بتایا ہے کہ دہشت گردوں نے محرم الحرام کے جلوسوں، مجالس اور اہم شخصیات پر موٹر سائیکل کے ذریعے خودکش حملوں کی منصوبہ بندی کی ہے۔

درخواست گزار کے مطابق یہ حملے موٹر سائیکل میں بم نصب کرنے کے علاوہ خودکش بھی ہوسکتے ہیں۔

"انٹیلی جنس اداروں نے اپنی رپورٹوں میں بتایا ہے کہ دہشت گردوں نے محرم الحرام کے جلوسوں، مجالس اور اہم شخصیات پر موٹر سائیکل کے ذریعے خودکش حملوں کی منصوبہ بندی کی ہے۔"

محکمۂ داخلہ کے ایڈیشنل چیف سیکریٹری وسیم احمد

وسیم احمد نے نے عباس ٹاؤن میں موٹر سائیکل میں ہونے والے بم دھماکے کا بھی حوالہ دیا ہے، جس میں دو افراد ہلاک اور بیس زخمی ہوگئے تھے۔

سیکرٹری داخلہ کے مطابق موٹر سائیکل پر پابندی کا فیصلہ عوام کے جان و مال کے تحفظ کے لیے کیا گیا۔

یاد رہے کہ وفاقی وزیر داخلہ رحمٰن ملک نے یکم محرم الحرام کے موقعے پر موٹر سائیکل چلانے پر پابندی عائد کردی تھی جسے سندھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس مشیر عالم نے رات کو ساڑھے گیارہ بجے بار ایسوسی ایشن کی درخواست پر معطل کر دیا تھا۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔