’کالعدم تنظیموں پر نظرِثانی کی جائے گی‘

آخری وقت اشاعت:  پير 26 نومبر 2012 ,‭ 06:50 GMT 11:50 PST

’میں یہ جاننے کی کوشش کروں گا کہ کون کون سی تنظیمیں ایسی ہیں جنہوں نے دہشت گردی چھوڑ دی ہے‘

پاکستان کے وفاقی وزیر رحمان ملک نے کالعدم تنظیم تحریکِ طالبان پاکستان کے سربراہ حکیم اللہ محسود کو چیلنج کرتے ہوئے کہا ہے کہ انھیں معلوم ہے کہ وہ کن ٹھکانوں میں رات گزارتے ہیں۔

یہ بات رحمان ملک نے اتوار کی رات اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا ’حکیم اللہ محسود کو ایک بار پھر کہتا ہوں کہ توبہ کرلے۔ میں ولی الرحمان، عصمت اللہ معاویہ اور کمانڈر نذیر کو بھی یہ پیغام دیتا ہوں۔ ہم آپ سب کو جانتے ہیں۔ آپ کو اسلحہ کہاں سے ملتا ہے وہ بھی جانتے ہیں اور کن بلوں میں رات گزار کر آگے کہاں جاتے ہو۔‘

رحمان ملک نے کالعدم تنظیموں کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ جو تنظیمیں کالعدم قرار دی جا چکی ہیں ان کو میں بلاؤں گا اور ان کے کیسز پر نظرثانی کی جائے گی۔

’میں یہ جاننے کی کوشش کروں گا کہ کون کون سی تنظیمیں ایسی ہیں جنہوں نے دہشت گردی چھوڑ دی ہے۔ اور جن تنظیموں نے دہشت گردی نہیں چھوڑی ان کے خلاف مزید سخت کارروائی کی جائے گی۔‘

وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ ایک ماہ میں غیر قانونی موبائل سموں کا بھی خاتمہ کرنا ہے تاکہ آگے موبائل فون بلاک کرنے نہ پڑیں اور نہ ہی موٹر سائیکل سواری پر پابندی لگانی پڑے۔

’غیر قانونی سموں کے خلاف کارروائی پر تمام صوبے متفق ہیں۔‘

سابق وزیر اعظم بینظیر بھٹو کے قتل کے کیس کے حوالے سے پوچھے گئے ایک سوال پر رحمان ملک نے کہا کہ تفتیش مکمل ہو چکی ہے اور چالان پیش کردیا گیا ہے۔ ’گواہان عدالت کے سامنے اپنے ریکارڈ بیان کرا رہے ہیں۔ ایک سو پینتیس سے زیادہ گواہان ہیں اور ابھی تک پچیس گواہان نے دالت کے سامنے بیان دیے ہیں۔‘

انہوں نے مزید کہا کہ وکیل استغاثہ اور وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے نے لاہور ہائی کورٹ میں درخواست دی ہے کہ انسداد دہشت گردی کی عدالت کو حکم دیا جائے کہ اس کیس کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ تفتیشی رپورٹ کو منظرِ عام پر نہیں لا سکتے لیکن اگر عدالت اجازت دے تو ایسا کیا جا سکتا ہے۔

تاہم انہوں نے سیکریٹری داخلہ سے کہا کہ میڈیا کے لیے ایک بریفنگ کا انتظام کریں جس میں تمام پس منظر پر بریفنگ دی جائے گی اگر میڈیا وعدہ کرے کہ اس کو شائع نہیں کریں گے۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔