لاہور: شربت سے ہلاکتوں کی تحقیقات جاری

آخری وقت اشاعت:  منگل 27 نومبر 2012 ,‭ 17:13 GMT 22:13 PST

لاہور میں کھانسی کا شربت پینے سے مزید ایک شخص کی ہلاکت سے مرنے والوں کی تعداد سترہ ہجاری ہوگئی ہے۔ جبکہ ہلاکتوں کی تحقیقات یں

پاکستان کے صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں کھانسی کا شربت پینے سے مزید ایک شخص کی ہلاکت سے مرنے والوں کی تعداد سترہ ہوگئی ہے جبکہ شربت سے متاثر ہونے والے چار مزید افراد کو ہپستال میں داخل کرایا گیا ہے۔

ادھر مقامی عدالت نے زیر حراست تین افراد سے چھان بین کے لیے ان کی جسمانی ریمانڈ کی منظوری دے دی ہے۔

کھانسی شربت سے ہونے والی ہلاکتوں کی چھان بین کے لیے قائم کردہ تین مختلف کمیٹیاں اپنی تحقیقات کر رہی ہیں لیکن ابھی تک کسی حتمی نتیجے تک نہیں پہنچ سکیں۔

زیادہ تر اموات جمعہ اور اتوار کے درمیان ہوئیں اور حکام کا کہنا ہے کہ اکثر متاثرین کا تعلق لاہور کے علاقے شاہدرہ سے ہے۔ متاثرہ افراد کی عمریں بیس سے چالیس سال کے درمیان ہیں۔

منگل کے روز کھانسی کا شربت سے متاثر ہونے والے ایک اور مریض کی ہلاکت ہوگئی جبکہ چار مزید متاثرہ افراد کو میو ہسپتال میں داخل کرایا گیا۔

کھانسی شربت سے ہونے والی ہلاکتوں کی چھان بین کے لیے قائم کردہ تین مختلف کمیٹیاں اپنی تحقیقات کررہی ہیں لیکن ابھی تک کسی حتمی نتیجے تک نہیں پہنچ سکیں

کھانسی کے شربت سے ہلاک ہونے والے دو مریضوں کی پورسٹ مارٹم رپورٹ سے ان کی ہلاکت کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی اور اب ان کے معدے کا کیمیائی تجزیہ کیا جائے گا۔

ابتدائی طور پر ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ کھانسی کا شربت مقدار سے زیادہ استعمال کیا گیا ہے جس کی وجہ سے ہلاکتیں ہوئی۔

دوسری طرف پولیس نے تینوں ملزمان کو جوڈیشل مجسٹریٹ وسیم انجم کی عدالت میں پیش کیا اور عدالت سے استدعا کی کہ ملزموں سے تفتیش کرنی ہے اس لیے ان کا جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔

پولیس نے کھانسی کا شربت فراہم کرنے والے ڈسٹری بیوٹر اور میڈیکل کے سٹوروں کے دو مالکان کو حراست میں لیا تھا۔

عدالت نے ملزموں کا چار دنوں کا جسمانی ریمانڈ کی منظوری دیتے ہوئے انہیں پولیس کی تحویل میں دے دیا۔

پنجاب حکومت کے مشیرِ صحت خواجہ سلمان رفیق نے بی بی سی کو بتایا کہ شربت سے متاثر ہونے والے لوگ اس شربت کو نشے کے طور پر استعمال کر رہے تھے۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ خدشہ ہے کہ مارکیٹ میں آنے والی اس دوا کے اسٹاک میں خرابی ہو۔

حکومت کا کہنا ہے کہ کھانسی کے شربت کی کیمیائی تجزیہ کے بعد ہی ہلاکتوں کی وجہ معلوم ہوسکے گی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔