الطاف حسین کو توہینِ عدالت کا نوٹس جاری

آخری وقت اشاعت:  جمعـء 14 دسمبر 2012 ,‭ 15:09 GMT 20:09 PST

’یہ کسی عدالت کا نہیں بلکہ عوام کا جمہوری حق ہے کہ وہ کسی بھی حلقہ میں کس جماعت کو اپنا مینڈیٹ دیتے ہیں‘

پاکستان کی سپریم کورٹ نے متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین کو عدلیہ کے فیصلے پر تنقید کرنے پر توہینِ عدالت کے معاملے میں اظہارِ وجوہ کا نوٹس جاری کردیا ہے۔

عدالت نے الطاف حسین کو سات جنوری کو ذاتی طور پر عدالت کے سامنے پیش ہونے کا حکم دیا ہے۔

سپریم کورٹ کی جانب سے جمعہ کو جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ الطاف حسین نے اپنی تقریر میں ججوں کو دھمکایا ہے اور یہ تقریر ججوں کے خلاف نفرت پھیلانے، ان کا مذاق اڑانے اور توہین کرنے جیسی ہے۔

سپریم کورٹ کے اعلامیے کے مطابق یہ معاملہ جمعہ کو عدالت کے رجسٹرار کا دفتر سپریم کورٹ کے اس بینچ کے علم میں لایا جو کراچی میں بدامنی سے متعلق عدالت کے ازخود نوٹس اور اس سے متعلق دوسری درخواستوں کی سماعت کر رہا تھا۔

رجسٹرار کے دفتر نے عدالت کو دو دسمبر کو ہونے والی الطاف حسین کی تقریر کے متن سے آگاہ کیا جس میں عدالت کے بقول سپریم کورٹ کے معزز ججوں کے بارے میں غیرضروری الزامات لگائے گئے ہیں۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ عدالت الطاف حسین کی اس تقریر کے اقتباسات پڑھنے کے بعد یہ سمجھتی ہے کہ یہ تقریر عدالت کی کارروائی میں مداخلت کرنے اور اس میں رکاوٹ ڈالنے کے مترادف ہے کیونکہ اس میں سپریم کورٹ کے معزز ججوں کو دھمکیاں دی گئی ہیں اور یہ تقریر ججوں کے خلاف نفرت پیدا کرنے، ان کا مذاق اڑانے اور توہین کرنے جیسی ہے۔

عدالت نے آئین کے آرٹیکل 204 اور توہین عدالت کے آرڈیننس 2003 کی دفعہ تین کے تحت الطاف حسین کو نوٹس جاری کرنے کا حکم دیا جس میں ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ذاتی طور پر پیش ہوکر وضاحت کریں کہ کیوں نہ ان کے خلاف پاکستان کے آئین اور قانون کے تحت توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔

عدالت نے اپنے حکم میں الطاف حسین کو پاکستان کے سیکرٹری خارجہ اور متحدہ قومی موومنٹ کے ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار کی معرفت بھی یہ نوٹس بھیجنے کی ہدایت کی ہے۔

یاد رہے کہ الطاف حسین کی یہ تقریر بظاہر سپریم کورٹ کے اس عبوری حکم کے متعلق تھی جس میں کراچی شہر میں مبینہ طور پر لسانی بنیادوں پر کی گئی حلقہ بندیاں ختم کرنے کی ہدایت کی گئی تھی۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔