پشاور ایئرپورٹ پر راکٹوں سے حملہ، چار ہلاک

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 15 دسمبر 2012 ,‭ 17:11 GMT 22:11 PST

پشاور میں ایئرپورٹ کو متعدد راکٹ حملوں کا نشانہ بنایا گیا ہے جس سے چار افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

پشاور کے سپرنٹنڈنٹ پولیس خالد ہمدانی نے ہمارے نامہ نگار دلاور خان وزیر کو بتایا کہ اس واقعے میں بیس افراد کے زخمی ہونے کی بھی اطلاع ہے۔

خالد ہمدانی نے ہمارے نمائندے کو بتایا کہ ابتدائی اطلاعات کے مطابق تین راکٹ آ کر گرے ہیں۔ انھوں نے بتایا ہے کہ پولیس کی ٹیمیں وہاں پہنچ گئی ہیں۔

انھوں نے بتایا کہ دھماکوں سے ایئرپورٹ کی دیوار مہندم ہو گئی ہے۔

دھماکوں کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ اس سے آس پاس کے کئی مکانات کے شیشے ٹوٹ گئے۔

واضح رہے کہ قبائلی علاقوں میں ہونے والے فوجی آپریشنوں میں استعمال ہونے والے گن شپ ہیلی کاپٹر پشاور ایئرپورٹ ہی سے اڑتے ہیں اور یہاں ہیلی کاپٹر تیار رہتے ہیں۔

صوبہ خیبر پختون خوا کے سینیئر وزیر بشیر احمد بلور نے کہا ہے کہ سکیورٹی فورسز صورتِ حال کر کنٹرول کر رہی ہیں۔

پی ٹی وی نے مزید بتایا ہے کہ پشاور ایئرپورٹ کی طرف جانے والے راستوں کو بند کر دیا گیا ہے۔

پاکستان کے بعض نجی ٹی وی چینل پر نشر کی جانے والی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ دھماکے کے مقام پر لوگ سراسیمگی کی حالت میں ادھر ادھر بھاگ رہے ہیں اور مسلح پولیس اہلکاروں کے دستے علاقے میں پہنچ گئے ہیں۔

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔