’بھارتی مداخلت کے شواہد موجود ہیں‘

آخری وقت اشاعت:  اتوار 16 دسمبر 2012 ,‭ 15:09 GMT 20:09 PST

بھارت کے دورے میں بلوچستان اور خیبر پختون خوا میں بھارتی مداخلت کا مسئلہ اٹھایا: رحمٰن ملک

پاکستان کے وزیرِ داخلہ رحمان ملک نے کہا ہے کہ صوبہ بلوچستان میں بھارتی مداخلت کے شواہد موجود ہیں۔

اتوار کو بھارت کے دورے سے واپسی پر اسلام آباد ایئر پورٹ پر میڈیا کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے وزیر داخلہ رحمان ملک نے کہا کہ’ انہوں نے بھارت کے دورے میں بلوچستان اور خیبر پختونخوا میں بھارتی مداخلت کا مسئلہ اٹھایا‘۔

رحمان ملک کے بقول بھارت سے فون کالز کے ذریعے بلوچستان کے عسکریت پسندوں کو ہدایات دی جاتی ہیں اور ان کے پاس اس سلسلے میں ثبوت موجود ہیں جو جلد ہی اکٹھے کر کے بھارت کے حوالے کر دیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ اس سال مئی میں پاکستان میں بھوربن کے مقام پر ہونے والے دونوں ملکوں کے داخلہ سیکریٹریوں کے مذاکرات کے دوران بھی پاکستان نے بلوچستان میں بھارتی مداخلت کا معاملہ اٹھایا تھا۔

پاکستانی وزیرِ داخلہ نے بھارت کے دورے کے بعد پاکستان آمد کے موقعے پر صحافیوں کو بتایا کہ بھارت میں حافظ سعید کے معاملے پر بھی بات ہوئی لیکن بھارت نے ان کے خلاف صرف معلومات دیں، کوئی ثبوت نہیں دیا، اگر کوئی ثبوت ملا تو حکومت ان کے خلاف بھی کارروائی کرے گی۔

"ہم سے زیادہ دہشت گردی کا نشانہ کوئی نہیں بنا، ہم نے چالیس ہزار سے زیادہ جانیں قربان کی ہیں۔"

پاکستانی وزیرِ داخلہ رحمٰن ملک

رحمٰن ملک نے کہا کہ اس سے قبل بھارت نے جو شواہد دیے وہ ہماری عدالتوں کی کارروائی کے لیے ناکافی تھے، ہماری عدالتوں نے کہہ دیا تھا کہ حافظ سعید کے خلاف شواہد ناکافی ہیں اس لیے انھیں گرفتار نہیں کیا جا سکتا۔

رحمٰن ملک نے دہشت گردی کے بارے میں کہا کہ ’ہم سے زیادہ دہشت گردی کا نشانہ کوئی نہیں بنا، ہم نے چالیس ہزار سے زیادہ جانیں قربان کی ہیں‘۔

انھوں نے ہفتے کی رات پشاور میں ہونے والے حملے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہم روز دہشت گردی کا شکار ہوتے ہیں۔

پاکستانی وزیرِ داخلہ نے کہا کہ بھارت کے وزیر داخلہ سشیل کمار شندے نے انہیں یہ یقین دہانی کرائی ہے کہ عنقریب بھارت کا ایک وفد پاکستان آئے گا اور ممبئی حملوں کی تحقیقات کے بارے میں شرائط طے کرے گا۔

ایک سوال کے جواب میں پاکستانی وزیرِ داخلہ نے بتایا کہ بھارتی وزیرِ داخلہ نے میری درخواست پر کرکٹ کے شائقین کو تین ہزار ویزے دیے تھے، لیکن میں نے ان سے ان میں اضافے کے لیے کہا تو انھوں نے کہا کہ آپ جتنے چاہیں ویزے لے لیں۔

رحمٰن ملک نے شائقینِ کرکٹ سے کہا کہ وہ اس ماہ کے آخر میں بھارت اور پاکستان کے درمیان ہونے والی سیریز دیکھنے کے لیے جلد سے جلد ویزوں کے لیے درخواستیں جمع کرا دیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔