’مولوی فقیر کو جلد از جلد پاکستان کے حوالے کریں‘

آخری وقت اشاعت:  جمعرات 21 فروری 2013 ,‭ 15:45 GMT 20:45 PST

مولوی فقیر کو پیر کے روز مہمند درہ ضلع سے اپنے تین ساتھیوں کے ہمراہ گرفتار کیاگیا

پاکستان کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ افغانستان میں حراست میں لیے جانے والے شدت پسند طالبان کمانڈر مولوی فقیر کو جلد از جلد پاکستان کے حوالے کیا جانا چاہیے۔

پاکستانی وزارت خارجہ کے ترجمان معظم خان نے اسلام آباد میں جمعرات کو ہفتہ وار بریفنگ میں صحافیوں کو بتایا کہ افغان وزیر خارجہ زلمے رسول نے پاکستانی وزیر خارجہ حنا ربانی کھر کو مولوی فقیر کی گرفتاری کی اطلاع دی تھی۔

ترجمان کے مطابق بدھ کی رات افغان وزیرِ خارجہ نے اپنی پاکستانی ہم منصب سے ٹیلیفونک گفتگو میں اس گرفتاری کی تصدیق کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ ’ہم امید کرتے ہیں کہ انہیں جلد از جلد پاکستان کے حوالے کر دیا جائے گا کیونکہ ان کے ہاتھوں پر بہت سے معصوم پاکستانیوں کا خون ہے۔‘

ترجمان کا یہ بھی کہنا تھا کہ مولوی فقیر کی گرفتاری پاکستان اور افغانستان کے درمیان تعاون اور اعتماد کا مظہر ہے۔

اس سوال پر کہ کیا پاکستان صرف مولوی فقیر یا دیگر افراد کی حوالگی کا مطالبہ کر رہا ہے، ترجمان نے کہا کہ ہم پرامید ہیں کہ وہ تمام افراد جو پاکستان مخالف کارروائیوں میں مصروف ہیں، گرفتار ہوں گے اور پاکستان کے حوالے کیے جائیں گے۔

خیال رہے کہ اس سے قبل افغان حکام سے مولوی فضل اللہ کو بھی پاکستان کے حوالے کرنے کے بارے میں درخواست کی گئی ہے۔ اطلاعات کے مطابق مولوی فضل اللہ افغانستان کے صوبے کنہٹر میں موجود ہیں۔

اس سے پہلے افغانستان کی حکومت نے تصدیق کی تھی کہ باجوڑ سے تعلق رکھنے والے تحریک طالبان پاکستان کے اہم کمانڈر مولوی فقیر محمد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

افغانستان کے صوبے ننگرہار کےگورنر کے ترجمان احمدزئی عبدل زئی نے بتایا تھا کہ مولوی فقیر کو پیر کے روز مہمند درہ ضلع سے اپنے تین ساتھیوں کے ہمراہ گرفتار کیاگیا ہے۔

ننگر ہار کے گورنر کے ترجمان نے کہا کہ مولوی فقیر کی گرفتاری انٹیلجنس رپوٹوں کے نتیجے میں عمل میں آئی ہے۔

پاکستان کی حکومت کا موقف رہا ہے کہ مولوی فقیر حیسن اور ملا فضل اللہ افغانستان میں قیام پذیر ہیں اور وہاں سے پاکستان میں حملوں کی منصوبہ بندی کرتے ہیں۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔