ظلم ختم کرنے کیلیے جہاد کروں گا: عمران خان

آخری وقت اشاعت:  ہفتہ 23 مارچ 2013 ,‭ 15:25 GMT 20:25 PST

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اپنی انتخابی مہم کا آغاز کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ عوام کے ٹیکس کے پیسے کی حفاظت کریں گے۔

انہوں نے لاہور میں مینارِ پاکستان کے گراؤنڈ میں ایک بڑے مجمعے سے خطاب کیا۔

اس موقع پر انہوں نے عوام سے چھ وعدے کیے اور کہا کہ اگر وہ ان وعدوں کو پورا نہ کریں تو ان کو تحریک انصاف کے چیئرمین کے عہدے سے ہٹا دیں۔

’میرا پہلا وعدہ یہ ہے کہ میں آپ سے ہمیشہ سچ بولوں گا اور وہ بات کروں گا جو میں کر سکتا ہوں۔‘

انہوں نے کہا کہ وہ ووٹ لینے کے لیے ڈرامے نہیں کریں گے۔ ’ووٹ لینے کے لیے صوبوں یا تنخواہوں کا سہارا نہیں لوں گا۔‘

پاکستان تحریک انصاف کے قائد نے دوسرا وعدہ کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں ظلم ختم کرنے کیلیے جہاد کریں گے۔

’یہ نظام نہ چلنے کی وجہ یہ ہے کہ ہمارے ملک میں ظلم کا نظام ہے۔ یورپ میں ترقی کی وجہ یہ ہے کہ وہاں عدل و انصاف کا نظام ہے۔ میں مزدوروں، خواتین سمیت تمام مظلوموں کو ظلم کے نظام سے نجات دلاؤں گا۔‘

عمران خان کا تیسرا وعدہ تھا کہ ان کا سب کچھ اس ملک میں ہو گا۔ ’میں اسی ملک میں جیوں گا اور اسی ملک میں مروں گا۔ میرا پیسہ اس ملک میں رہے گا اور اسے کسی دوسرے ملک یا بیرون ملک بینک میں منتقل نہیں کروں گا۔‘

عمران خان نے پاکستان میں خاندانی سیاست کے خاتمے کا چوتھا وعدہ کرتے ہوئے کہا کہ نہ وہ اقتدار سے خود فائدہ اٹھائیں گے اور نہ ہی دوستوں اور رشتے داروں کو اٹھانے دیں گے۔

پی ٹی آئئ کے سربراہ عمران خان نے عوام سے چوتھا وعدہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ عوام کے ٹیکس کے پیسے کی حفاظت کریں گے۔ ’آپ کے ٹیکس کا پیسہ گورنر یا وزیر اعلیٰ ہاؤس پر خرچ نہیں کیا جائے گا۔ ہماری حکومت آئی تو گورنر اور وزیر اعلیٰ ہاؤس کی دیواریں توڑ کر اس عمارت کو لائبریری بنائیں گے۔‘

عمران خان نے چھٹا اور وعدہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو تحفظ دیں گے۔ انہوں نے کہا ’جب کبھی بھی اس ملک سے باہر مقیم پاکستانیوں کو کوئی مشکل پیش آئی تو اس ملک کی عوام ان کے ساتھ ہو گی۔

جلسے میں عمران خان کے خطاب کے دوران تیز بارش شروع ہو گئی جس کے باعث جلسے کو تھوڑی دیر کے لیے روک دیا گیا۔ تاہم بارش تھمنے کے بعد جلسہ دوبارہ شروع ہو گیا۔

جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے جہاں چھ وعدے کیے وہیں انہوں نے جلسہ گاہ میں موجود افراد سے کہا وہ ان سے چار وعدے کریں۔

عمران خان نے جلسے کے شرکاء سے کہا کہ وہ یہ وعدہ کریں کہ وہ پاکستانی قوم ہونے کی حیثیت سے سچ بولیں گے۔

تحریک انصاف کے سربراہ نے کہا کہ میرے ساتھ یہ وعدہ کرو کہ میرے ساتھ مل کر ظالم کے خلاف کھڑے ہو گے۔

انہوں نے کہا کہ خوف کے بتوں کو توڑ یں۔ عمران خان نے یہ وعدہ بھی لیا نوجوان ان کی تبدیلی رضا کار بنیں گے ۔

اسی بارے میں

متعلقہ عنوانات

BBC © 2014 بی بی سی دیگر سائٹوں پر شائع شدہ مواد کی ذمہ دار نہیں ہے

اس صفحہ کو بہتیرن طور پر دیکھنے کے لیے ایک نئے، اپ ٹو ڈیٹ براؤزر کا استعمال کیجیے جس میں سی ایس ایس یعنی سٹائل شیٹس کی سہولت موجود ہو۔ ویسے تو آپ اس صحفہ کو اپنے پرانے براؤزر میں بھی دیکھ سکتے ہیں مگر آپ گرافِکس کا پورا لطف نہیں اٹھا پائیں گے۔ اگر ممکن ہو تو، برائے مہربانی اپنے براؤزر کو اپ گریڈ کرنے یا سی ایس ایس استعمال کرنے کے بارے میں غور کریں۔