تیرہ نگراں وزراء کے محکموں کا اعلان

Image caption صدر زرداری نے منگل کو چودہ رکنی کابینہ سے حلف لیا تھا

پاکستان کے نگراں وزیراعظم میر ہزار خان کھوسو نے اپنی نگراں کابینہ کے محکموں کا اعلان کر دیا ہے تاہم ان میں امورِ خارجہ کی اہم وزارت شامل نہیں ہے۔

وزیراعظم ہاؤس سے جاری ہونے والے بیان کے مطابق پنجاب کے سابق آئی جی پولیس ملک حبیب کو امورِ داخلہ کی اہم وزارت دی گئی ہے جبکہ ان کے پاس نارکوٹکس کنٹرول کی وزارت کا اضافی چارج ہوگا۔

معروف وکیل احمر بلال صوفی کو قانون و انصاف، پارلیمانی امور اور حقوقِ انسانی کی وزارتوں کا چارج دیا گیا ہے۔

سینیئر صحافی اور انگریزی زبان کے اخبار پاکستان ٹو ڈے کے مدیر عارف نظامی کو ملک کا نیا وزیرِ اطلاعات مقرر کیا گیا ہے جبکہ ان کے پاس پوسٹل سروسز کا اضافی چارج ہوگا۔

کابینہ میں شامل واحد خاتون ڈاکٹر ثانیہ نشتر کو تعلیم، انفارمیشن ٹیکنالوجی اور سائنس کی وزاتیں دی گئی ہیں۔ صوبہ خیبرپختونخوا سے تعلق رکھنے والی ثانیہ نشتر نے کنگز کالج لندن سے شعبۂ صحت میں پی ایچ ڈی کی ہوئی ہے۔

اس کے علاوہ ڈاکٹر مصدق ملک کو پانی و بجلی، شہزادہ احسن اشرف شیخ کو صنعت و پیداوار، مقبول رحمت اللہ کو ٹیکسٹائل اور کامرس، عبدالمالک کاسی کو ریلوے، اسد اللہ مندوخیل کو پورٹس اینڈ شپنگ اور مواصلات، میر حسن خان ڈومکی کو فوڈ سکیورٹی اور بین الصوبائی رابطے کا وزیر مقرر کیا گیا ہے۔

فیروز جمال شاہ کاکاخیل کو بیرونِ ملک پاکستانیوں کی وزارت ملی ہے جبکہ ڈاکٹر یونس سومرو ہاؤسنگ اور تعمیرات اور شہزادہ جمال مذہبی امور اور قومی ہم آہنگی کے نگراں وفاقی وزیر بنائے گئے ہیں۔

منگل کی شام حلف اٹھانے والے چودہ وفاقی وزراء میں سے تیرہ کے لیے محکموں کا اعلان کیا گیا ہے اور کراچی سے تعلق رکھنے والے سہیل وجاہت صدیقی کا نام اس فہرست میں شامل نہیں۔

سہیل وجاہت مختلف اوقات میں سیمنز اور کے ایس سی کے چیف ایگزیکٹو رہ چکے ہیں اور ان کا شمار سابق صدر جنرل پرویز مشرف کے قریبی ساتھیوں میں ہوتا ہے۔

اسی بارے میں