شاہد نذیر کا انتخابی مہم کے لیے گانا

Image caption شاہد نذیر کے مطابق میاں نواز شریف نے خواہش کا اظہار کیا تھا کہ وہ ان کی جماعت کے لیے انتخابی گیت تیار کریں

ون پاؤنڈ فش گانے سے شہرت پانے والے پاکستانی شہری شاہد نذیر بھی ان دنوں اپنے ملک میں ہونے والے انتخابات کی گہما گہمی میں مصروف ہیں اور اپنے ہی انداز میں ایک سیاسی جماعت کی انتخابی مہم چلا رہے ہیں۔

شاہد نذیر لاہور میں مسلم لیگ نون کی انتخابی مہم کے لیے ایک گانے کی ریکارڈنگ کررہے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ اگلے چند دنوں میں یہ ریکارڈنگ مکمل ہوجائے گی۔

مسلم لیگ نون نے اپنی انتخابی مہم کے لیے مختلف گلوکاروں سے انتخابی گانے تیار کروائے ہیں اور شاہد نذیر کا گانے بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔

شاہد نذیر کے مطابق مسلم لیگ نون کے سربراہ نواز شریف نے خواہش کا اظہار کیا تھا کہ وہ ان کی جماعت کے لیے انتخابی گیت تیار کریں۔

پنجاب کے علاقے پتوکی سے تعلق رکھنے والے شاہد نذیر نے گزشتہ دنوں لاہور میں مسلم لیگ نون کے صدر نواز شریف سے ملاقات کی تھی۔

ان کا کہنا ہے کہ ملاقات میں جہاں نواز شریف نے ان کے گانے ون پاؤنڈ فش کی تعریف کی وہیں انہوں نے اپنی انتخابی مہم کے لیے گانے کی فرمائش بھی ظاہر کی۔

ایک سوال پر شاہد نذیر نے بتایا کہ مسلم لیگ نون کے علاوہ کسی دوسری جماعت نے ان کو انتخابی گیت یا گانے کے لیے پیشکش نہیں کی۔

انہوں نے بتایا کہ اس انتخابی گانے کے لیے ان کا مسلم لیگ نون کے ساتھ ایک معاہدہ ہوا اور اسی معاہدے کے تحت وہ گانا تیار کررہے ہیں۔

شاہد نذیر نے بتایا کہ انتخابی گیت کو انہوں نے خود لکھا ہے اور اس کی تیاری میں ان کے دو سے تین ہفتے لگے اور نواز شریف کی منظوری کے بعد اس گانے کی ریکارڈنگ ہورہی ہے۔

اس سے پہلے مسلم لیگ نون کا راحت فتح علی خان کی آواز میں بھی ایک انتخابی گیت مختلف ٹی وی چینلز پر نشر کیا جارہا ہے۔

گلوکار شاہد کے بقول مسلم لیگ نون کی انتخابی مہم کے لیے وہ جس گانے کی ریکارڈ نگ کررہے ہیں اس کا دورانیہ چار منٹ ہے اور یہ گانا پاپ میوزک کے ساتھ گایا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نوجوان نسل میں پاپ میوزک بہت مقبول ہے اور اس لیے انہوں نے اپنے گائیکی کے انداز کو سامنے رکھتے ہوئے انتخابی گانے کو پاپ میوزک میں تیار کیا ہے۔

شاہد نذیر نے بتایا کہ مسلم لیگ نون کے انتخابی گانے میں ان منصوبوں کا ذکر کیا گیا ہے جو مسلم لیگ نون نے اپنے دورِ اقتدار میں انجام دیے اور انہیں یہ امید ہے کہ ان کا تیار کردہ یہ انتخابی گیت نوجوانوں کو اپنی طرف متوجہ کرے گا۔

اسی بارے میں