’انتخابات ہائی جیک کرنے کی سازش ہو رہی ہے‘

پاکستان پیپلز پارٹی اور اس کی سابق اتحادی جماعتیں متحدہ قومی موومنٹ اور عوامی نیشنل پارٹی کا کہنا ہے کہ ملک میں انتہا پسندوں کو مسلط کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔

یہ بات ان تینوں جماعتوں کے رہنماؤں نے کراچی میں ایک مشترکہ پریس کانفرنس میں کہی۔

ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر ایم کیو ایم کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار، پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر رحمان ملک اور عوامی نیشنل پارٹی کے سندھ کے صدر شاہی سید نے پریس کانفرنس میں اس عزم کا اظہار کیا کہ دہشتگردی کے سامنے سر نہیں جھکائیں گے۔

ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ تین لبرل جماعتوں کو انتخابات سے باہر رکھنے کی اس سازش میں بین الاقوامی اور پاکستانی اسٹیبلشمنٹ شریک ہے۔

’تمام جماعتوں کو الیکشن لڑنے کے یکساں مواقع نہیں دیے جارہے اور انتخابات کو ہائی جیک کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔‘

عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر شاہی سید کا کہنا تھا کہ جو کچھ ملک میں ہورہا ہے وہ اسلام کی روح اور پاکستان کی بقاء کے خلاف بھی سازش ہے۔

شاہی سید نے کہا کہ وقت آگیا ہے کہ آپس کی رنجشیں بھلاکر دہشت گردوں کےخلاف صف آراء ہوجائیں۔

سابق وفاقی وزیر داخلہ رحمان ملک نے کا کہنا تھا کہ دہشت گرد پاکستان توڑنا چاہتے ہیں اسی لیے وہ طالبان کا حمایت یافتہ وزیر اعظم لانا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے فرقہ ورانہ قتل عام کی جو پیشین گوئی کی وہ سچی ثابت ہوئیں۔

واضح رہے کہ کالعدم تنظیم تحریکِ طالبان پاکستان کی جانب سے ان تینوں جماعتوں کے رہنماؤں، انتخابی امیدواروں، جلوسوں اور انتخابی دفاتر کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔

اسی بارے میں