مسلم لیگ ن کی انتخابی مہم ایک روز کے لیے ملتوی

Image caption اقتدارمیں آ کر پنڈی کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پرحل کریں گے: نواز شریف

پاکستان مسلم لیگ ن کے سربراہ میاں محمد نوازشریف نےمنگل کی شب کوراولپنڈی کے لیاقت باغ میں انتخابی جلسے سے خطاب میں عمران خان کے زخمی ہونے کے پیشِ نظر اپنی انتخابی مہم ایک دن کے لیے ملتوی کرنے کا اعلان کیا ہے۔

نواز شریف کے بھائی اور مسلم لیگ ن کے سینیئر رہنما میاں شہباز شریف نے مسلم لیگ کے دوسرے رہنماؤں کے ساتھ لاہور کے شوکت خانم ہسپتال میں عمران خان کی عیادت بھی کی۔

عمران خان منگل کے شام لاہور میں ایک انتخابی جلسے میں سٹیج سے گر کر زخمی ہو گئے تھے۔

منگل کی رات کو مسلم لیگ ن کے قائد میاں محمد نوازشریف نے بھی پنڈی کے عوام سے ووٹ لینے کا وعدہ لیا اوردعویٰ کیا کہ وہ اقتدار میں آ کر پنڈی کے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پرحل کریں گے۔

مسلم لیگ ن کے جلسے میں لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ خاص کرنوجوانوں کے جذبات دیکھنے کے قابل تھے۔ نوجوانوں نے ہاتھوں میں مسلم لیگ ن کے جھنڈے اٹھائے ہوئے تھے اور موٹرسائیکلوں پر مختلف آوازوں والے سائلنسر لگائے تھے۔ بہت سے نوجوان گاڑیوں میں اونچی آواز میں بجنے والے ترانوں پر ناچتے ہوئے جلسہ گاہ میں داخل ہورہےتھے۔

اس کے علاوہ کئی گاڑیوں پر شیروں کے بڑے بڑے پتلے آویزاں تھے، جودیکھنے والوں کے لیے دلچسپی کے باعث بنے ہوئے تھے۔

جلسہ اپنے وقت مقررہ سےتقریباً دوگھنے تاخیر سے شروع ہوا۔اس کے باوجود خواتین اور بچوں سمیت لوگ بڑی تعداد میں محمد نوازشریف کا خطاب سننے کے لیے رات گئے تک لیاقت باغ کے سبزہ زار پربیھٹے رہے۔

جلسے میں شریک زیادہ تر بچوں اور نواجوانوں نے ایسی شرٹس پہن رکھی تھیں جن پر مسلم لیگ(ن) کا انتخابی نشان شیر پرنٹ کیا ہوا تھا۔

جلسہ کے موقعے پرسکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئےتھے۔ جلسہ گاہ تک جانے کے لیے مخصوص راستے بنائے گئے تھےجہاں پولیس کی بھاری نفری تعینات تھی اور لوگوں کی جامہ تلاشی کرنے کے بعد اندر جانے کی اجازت ملتی تھی۔

جلسے کی وجہ سے شہرمیں دن بھر مختلف مقامات پر ٹریفک کانظام درہم برہم رہا جس کے باعث پنڈی کے شہریوں کو مشکلات کا بھی سامناکرناپڑا۔ منگل کو شہر کے دیگرمقامات پر پیپلز پارٹی اور تحریکِ انصاف کے علاوہ دیگرسیاسی جماعتوں کی جانب سے کارنر میٹنگز کا انعقاد بھی کیا گیا تھا۔

جلسہ کے اختتام پر نوازشریف نے نہ صرف عمران خان کے زخمی ہونے پر نہ صرف افسوس کا اظہار کیا بلکہ ایک دن کے لیے انتخابی مہم کوموخر کرنے کا بھی اعلان کیا۔

جلسے میں شریک ایک نوجوان کا کہناتھا کہ وہ مسلم لیگ ن کی حمایت کرتے ہیں کیونکہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے پنجاب میں تعلم کوفروغ دینے کیے بہت اچھے کام کیے ہیں اور ایف ایس سی میں اچھے نمبرلینے پر ان سمیت بہت سے نوجوانوں کو لیپ ٹاپ دیے تھے۔

ایک اور شخص کا کہنا تھاکہ نوازشریف نے ایٹمی دھماکا کرکے ملکی سلامتی کوتحفظ فراہم کیا ہے اورآئندہ حکومت میں وہ نہ صرف بجلی کے بحران پر قابوپالیں گے بلکہ ایک بار پھرملکی معیشت کومضبوط کرنے کے لیے صنعت کو ترقی دیں گے۔

اسی بارے میں