خیبر پختونخوا کی چند خواتین ووٹرز

Image caption قبائلی علاقے مہمند ایجنسی میں تین فیصد تک خواتین کے ووٹ ڈالے جاتے تھے لیکن اس مرتبہ خواتین کے ووٹ ڈالنے کی شرح کئی گنا زیادہ بتائی جارہی ہے

خیبر پختونخوا میں خواتین کو کچھ پولنگ سٹیشنز پر ووٹ ڈالنے کی اجازت نہیں دی گئی تو یہاں ایک پولنگ سٹیشن ایسا بھی ہے جہاں پاکستان بننے کے بعد پہلی مرتبہ خواتین نے ووٹ ڈالے ہیں۔ یہ حلقہ ضلع چارسدہ کی یونین کونسل ترنگزئی میں واقع ہے۔

اس دور افتادہ یونین کونسل میں خواتین کو ووٹ کا علم بھی نہیں تھا اور انھیں یہ معلوم بھی نہیں تھا کہ ووٹ کیسے ڈالا جاتا ہے ۔ اس پولنگ سٹیشن پر خواتین کی بڑی تعداد نے ووٹ ڈالے ہیں۔

گورنمنٹ ہائی سکول میں قائم اس پولنگ سٹیشن پر سہ پہر تین بجے تک دو سو خواتین نے ووٹ ڈالے تھے جبکہ مزید خواتین ووٹ ڈالنے پولنگ سٹیشن پہنچ رہی تھیں۔

یہ حقلہ این اے سات چارسدہ ہے جہاں عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفندیار ولی خان ، جماعت اسلامی کے محمد ارشد خان ، پاکستان تحریک انصاف فضل محمد خان اور قومی وطن پارٹی کے سکندر شیرپاؤ کے درمیان مقابلہ ہے۔

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اس حلقے کے اس پولنگ سٹیشن پر خواتین کو ووٹ ڈالنے کی اجازت کچھ نئے امیدواروں کے اصرار پر دی گئی ہے۔

اس پولنگ سٹیشن پر موجود پریذائڈنگ افسر عظمیٰ نے بتایا انھیں خود مشکلات کا سامنا ہے کیونکہ اکثر خواتین کو کچھ معلوم نہیں ہے کہ وہ کیسے ووٹ ڈالیں اس لیے انھیں ان کو سب کچھ سمجھانا پڑتا ہے۔

اس کے علاوہ پاکستان کے قبائلی علاقے مہمند ایجنسی میں بھی اس مرتبہ خواتین کی بڑی تعداد نے ووٹ ڈالے ہیں۔ مقامی لوگوں نے بتایا کہ ماضی میں اس علاقے میں تین فیصد تک خواتین کے ووٹ ڈالے جاتے تھے لیکن اس مرتبہ خواتین کے ووٹ ڈالنے کی شرح کئی گنا زیادہ بتائی جارہی ہے۔

قبائلی علاقوں اور خیبر پختونخوا کی سرحد پر واقع نیم قبائلی علاقوں میں بھی اس مرتبہ خواتین کے ووٹ ڈالنے کی شرح ماضی کی نسبت زیادہ بتائی گئی ہے۔

دوسری جانب صوبے میں ایسے علاقے بھی ہیں جہاں مردوں نے خواتین کو ووٹ ڈالنے کی اجازت نہیں دی ہے ۔ ایک غیر سرکاری تنظیم عورت فاؤنڈیشن کی پشاور میں سربراہ شبینہ ایاز نے بتایا کہ صوبے میں دیر کے چند پولنگ سٹیشنز کے علاوہ نوشہرہ ، صوابی ، پشاور میں ہزار خوانی کے علاقے ، لکی مروت اور ڈیرہ اسماعیل خان کے چند ایک پولنگ سٹیشنز شامل ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ان کی تنظیم اس ساری صورتحال کا مشاہدہ کر رہی ہے اور اس کے بارے میں مزید تفصیلات بعد میں جاری کی جائیں گی۔

اسی بارے میں