ڈیرہ بگٹی: بارودی سرنگ پھٹنے سے بچہ ہلاک

Image caption بارودی سرنگوں کی وجہ سے اس علاقے میں حادثات ہوتے رہتے ہیں

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقے ڈیرہ بگٹی میں بارودی سرنگ کے ایک دھماکے میں ایک بچہ ہلاک اور چھ زخمی ہوگئے ہیں۔

ڈیرہ بگٹی میں لیویز فورس کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ یہ واقعہ جمعرات کو ڈیرہ بگٹی ٹاؤن سے 30 کلو میٹر کے فاصلے پر پھیروٹی کے علاقے میں پیش آیا۔

لیویز کے ان اہلکار نے مزید بتایا کہ نامعلوم افراد نے اس جگہ بارودی سرنگیں بچھائی تھیں۔

انھوں نے بتایا کہ پھیروٹی کے علاقے سے سات بچے پانی بھرنے گئے تھے جن میں سے ایک کا پاؤں بارودی سرنگ پر آ گیا جس کے نتیجے میں دھماکا ہوا۔

زخمیوں کو علاج کے لیے قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا جہاں بعض کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

ڈیرہ بگٹی سے صوبائی اسمبلی کے نو منتخب رکن سرفراز بگٹی نے بی بی سی سے بات کرتے ہوئے اس واقعے کو دہشت گردی قرار دیا اور مطالبہ کیا کہ علاقے کو باردوی سرنگوں سے پاک کیا جائے۔

ڈیرہ بگٹی کا شمار بلوچستان کے ان علاقوں میں ہوتا ہے جو شورش کے باعث سب سے زیادہ متاثر ہیں اور یہاں 2006 میں نواب اکبر بگٹی کی ہلاکت کے بعد سے حالات زیادہ خراب ہوئے ہیں۔

بارودی سرنگوں کی وجہ سے اس علاقے میں حادثات ہوتے رہتے ہیں۔

دو نومبر 2012 کو نامعلوم افراد کی جانب سے بچھائی جانے والی بارودی سرنگوں کے دھماکے میں بھی ایک خاتون اور ایک بچی ہلاک ہوگئی تھی۔

اسی بارے میں