پشاور میں فائرنگ سے پولیس افسر ہلاک

پاکستان کے صوبہ خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں حکام کا کہنا ہے کہ دو مختلف واقعات میں پولیس افسر سمیت تین افراد ہلاک اور دو زخمی ہوگئے ہیں۔

پولیس کے مطابق پہلا واقعہ پیر کی صبح پشاور کے علاقے سعید آباد میں اس وقت پیش آیا جب گھر سے دفتر جانے والے ٹریفک پولیس کے ڈی ایس پی امان اللہ کی گاڑی پر نامعلوم مسلح موٹر سائیکل سواروں نے اندھا دھند فائرنگ کردی۔

فائرنگ سے ڈی ایس پی اور ان کے ڈرائیور موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔پولیس حکام کے مطابق حملہ آور فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔

نامہ نگار رفعت اللہ اورکزئی کے مطابق پشاور میں کچھ عرصے سے پولیس اور سکیورٹی فورسز پر دن دہاڑے فائرنگ کے واقعات میں اضافہ ہو رہا ہے جس میں متعدد اہلکار ہلاک ہو چکے ہیں۔

دریں اثناء پشاور کے نواحی علاقے متھرا میں مسجد کے قریب دھماکہ خیز مواد پھٹنے سے ایک شخص ہلاک اور ایک زخمی ہوگیا ہے۔ دھماکے سے مسجد کی عمارت کو جزوی طور پر نقصان پہنچا ہے۔

متھرا پولیس کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ نامعلوم افراد نے اتوار اور پیر کی درمیانی شب متھرا کے علاقے تیرائی پایان میں دھماکہ خیز مواد مسجد کے اندر نصب کیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ مسجد کے چوکیدار دھماکہ خیز مواد وہاں سے ہٹانے کی کوشش کر رہے تھے کہ اس دوران ایک زوردار دھماکہ ہوا جس سے چوکیدار ہلاک اور وہاں موجود ایک اور شخص زخمی ہو گیا۔

اسی بارے میں