عبدالستار ایدھی کے دونوں گردے فیل ہوگئے

Image caption ایدھی کا شمار پاکستان کے ان لوگوں میں ہوتا ہے جنھوں نے بعد از مرگ اپنے اعضاء عطیہ کرنے کا اعلان کیا ہے

پاکستان کے نامور سماجی خدمت گذار عبدالستار ایدھی کے دونوں گردے فیل ہوگئے ہیں، اب ان کی باقی زندگی ڈائیلائسز پر گذرے گی۔

ملک کے نامور سرجن ڈاکٹر ادیب رضوی نے عبدالستار ایدھی کی صحت کے حوالے سے گردش کرتی خبروں کی منگل کو ایک پریس کانفرنس میں تصدیق کردی۔

سندھ انسٹیٹیوٹ آف یورالوجی اینڈ ٹرانسپلانٹیشن کے بانی ڈاکٹر ادیب رضوی نے میڈیا کو بتایا عبدالستار ایدھی اپنے معمولات زندگی سر انجام دے سکتے ہیں، لیکن انہیں ہر ہفتے ڈائیلائسز کرانا ہوگا۔

نامہ نگار ریاض سہیل کے مطابق عبدالستار ایدھی کا شمار پاکستان کے ان صف اول کے لوگوں میں ہوتا ہے جنھوں نے بعد از مرگ اپنے اعضاء عطیہ کرنے کا اعلان کیا، آج انھیں خود گردے کی ضرورت ہے۔

پچاسی سالہ عبدالستار ایدھی نے کراچی میں ایک ایمبولینس اور ڈسپینسری سے سماجی خدمت کا آغاز کیا، موجودہ وقت چاروں صوبوں میں ان کی ایمولینس سروس، لاورث بچوں کے سینٹر اور منشیات کے عادی لوگوں کی بحالی کے مراکز قائم ہیں۔

ایدھی کا کہنا تھا ان کی بیگم بلقیس ایدھی اور بیٹا فیصل ایدھی تمام معاملات کو سنبھالیں گے، اگر خدا کی رضامندی ہوگی تو وہ ماضی کی طرح اپنا مشن جاری رکھیں گے۔

اسی بارے میں