پی ٹی آئی کی عائلہ ملک جعلی ڈگری پر نااہل

عائلہ ملک(فیس بک پبلک پروفائل)
Image caption عائلہ ملک عمران خان کی خالی کردہ نشست پر امیدوار تھیں

لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ کے الیکشن ٹربیونل نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 71 میں پاکستان تحریک انصاف کی اُمیدوار عائلہ ملک کو جعلی ڈگری رکھنے پر نااہل قرار دے دیا ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کی رہنما کی ایف اے کی ڈگری کو پاکستان مسلم لیگ نون سے تعلق رکھنے والے اُن کے مخالف اُمیدوار عبید اللہ شادی خیل نے الیکشن ٹربیونل میں چیلنج کیا تھا۔

جسٹس مامون رشید شیخ اور جسٹس عائشہ ملک پر مشتمل لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ کے دو رکنی الیکشن ٹربیونل نے پیر کو عائلہ ملک کے خلاف دائر کی جانے والی درخواست کی سماعت کی۔

ہمارے نامہ نگار کے مطابق سماعت کے دوران راولپنڈی کے تعلیمی بورڈ کی طرف سے ایک جامع جواب عدالت میں جمع کروایا گیا جس میں کہا گیا تھا کہ مذکورہ رول نمبر کے تحت عائلہ ملک نامی خاتون کا کوئی ریکارڈ اُن کے پاس موجود نہیں ہیں لہذا انھوں نے جو ڈگری پیش کی ہے وہ جعلی ہے۔

الیکشن ٹربیونل نے راولپنڈی بورڈ کی رپورٹ آنے تک عائلہ ملک کی اہلیت سے متعلق درخواست پر فیصلہ محفوظ کر رکھا تھا۔

عائلہ ملک نے دعویٰ کیا تھا کہ اُنہوں نے سنہ اُنیس سو اٹھانوے میں راولپنڈی بورڈ سے ایف اے کی ڈگری حاصل کی تھی۔

عائلہ ملک پاکستان کے سابق صدر فاروق احمد خان لغاری کی بھانجی ہیں اور وہ سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے دور میں خواتین کی مخصوص نشستوں پر رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئی تھیں۔

حالیہ عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان قومی اسمبلی کے حلقہ این اے اکہتر سے منتخب ہوئے تھے اور اُنہوں نے اپنے مخالف اُمیدوار کو ایک لاکھ سے زائد ووٹوں سے ہرایا تھا۔

قومی اسمبلی کے تین حلقوں سے منتخب ہونے کے بعد عمران خان نے میانوالی کی نشست خالی کر دی تھی اور اُن کی جماعت نے عائلہ ملک کو ضمنی انتخاب میں اپنا اُمیدوار نامزد کیا تھا۔

اسی بارے میں