کامن ویلتھ ہاکی:پاکستان کو 2 ہفتے کی مہلت

Image caption متوازی ایسوسی ایشن کے عہدیدار پاکستان کی اولمپک رکنیت معطل کرانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہے ہیں۔: لیفٹینٹ جنرل عارف حسن

کامن ویلتھ گیمز میں شرکت کے لیے پاکستان ہاکی فیڈریشن کو مزید دو ہفتے کی مہلت مل گئی ہے اور اب اسے سولہ اگست تک اپنی شرکت کی تصدیق کرنی ہوگی تاہم وہ جو بھی فیصلہ کرے گی وہ انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی کی تسلیم شدہ پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے توسط سے ہوگا۔

پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر لیفٹینٹ جنرل (ریٹائرڈ) سید عارف حسن نے بی بی سی کو بتایا کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن نے کامن ویلتھ گیمز میں شرکت کے بارے میں ان کی ای میل کا کوئی جواب نہیں دیا بلکہ اس بارے میں پاکستان سپورٹس بورڈ نے فیڈریشن کو متوازی اولمپکس ایسوسی ایشن سے رابطہ کرنے کے لیے کہا جس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔

کامن ویلتھ گیمز میں پاکستان کی شرکت مشکوک

سید عارف حسن نے کہاکہ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے اس رویے اور ای میل کاجواب نہ دینے کے بارے میں انہوں نے کامن ویلتھ گیمز کے منتظمین کو آگاہ کر دیا تھا تاہم بعد میں انہوں نے ملک کے وسیع تر مفاد میں کامن ویلتھ گیمز کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر سے رابطہ کرتے ہوئے درخواست کی کہ ہاکی پاکستان کا قومی کھیل ہے اور پوری قوم کی ہاکی سے جذباتی وابستگی ہے لہذا پاکستان کو کامن ویلتھ گیمز کے ہاکی مقابلوں میں حصہ لینے کی اجازت دی جائے۔

Image caption کامن ویلتھ گیمز کے منتظمین دو اگست کو باضابطہ دعوت نامہ بھیجیں گے

سید عارف حسن نے بتایا کہ کامن ویلتھ گیمز نے چیف ایگزیکٹیو آفیسر نے ان سے کہا کہ اگر وہ انہیں شرکت کی خواہش سے آگاہ کر دیں تو باضابطہ دعوت نامہ بھیجا جاسکتا ہے جس پر انہوں نے یہ جانتے ہوئے بھی کہ پاکستان ہاکی فیڈریشن نے کوئی مثبت جواب نہیں دیا اپنی ذمہ داری پر کامن ویلتھ گیمز کے منتظمین کو پاکستانی ہاکی ٹیم کی شرکت کے بارے میں آگاہ کر دیا ہے۔

پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے صدر نے کہا کہ کامن ویلتھ گیمز کے منتظمین دو اگست کو باضابطہ دعوت نامہ بھیجیں گے اور جن کھیلوں میں پاکستان نے شرکت کرنی ہے اس کی تصدیق چاہیں گے اور اس کے لیے سولہ اگست کی ڈیڈلائن مقرر کی گئی ہے۔

سید عارف حسن نے کہا کہ کامن ویلتھ گیمز میں پاکستان جس جس کھیل میں شرکت کرے گا اس کی تصدیق پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کے ذریعے ہی ہوسکے گی کوئی بھی فیڈریشن براہ راست ان کھیلوں کے منتظمین سے رابطہ نہیں کر سکتی۔

سید عارف حسن نے کہا کہ یہ بات انتہائی مضحکہ خیز ہے کہ متوازی ایسوسی ایشن کامن ویلتھ گیمز کے سات کھیلوں میں شرکت کے دعوے کر رہی ہے کیونکہ آئی او سی اور کھیلوں کی عالمی فیڈریشنز اس ایسوسی ایشن کو تسلیم ہی نہیں کرتیں۔

انہوں نے کہا کہ متوازی ایسوسی ایشن کے عہدیدار پاکستان کی اولمپک رکنیت معطل کرانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑ رہے ہیں۔

اسی بارے میں