سیلاب: ہلاکتوں کی تعداد 98، ایک لاکھ متاثر

Image caption ​این ڈین ایم اے کے مطابق سیلاب اور بارشوں سے اب تک 386 دیہات متاثر ہوئے ہیں

پاکستان کے قدرتی آفات سے نمٹنے کے ادارے این ڈی ایم اے کے مطابق ملک بھر میں شدید بارشوں اور سیلاب کے باعث اب تک 98 افراد ہلاک جبکہ ایک لاکھ دو سو نو افراد متاثر ہوئے ہیں۔

دوسری جانب ریڈیو پاکستان کے مطابق سیلاب سے ہزاروں ایکٹر رقبے پر کھڑی فصلیں تباہ ہو گئی ہیں۔

سرکاری ریڈیو کے مطابق صوبے پنجاب کے شہر سیالکوٹ اور ناروال کے اضلاع نالہ ڈیک اور بستر میں سیلاب کے باعث دو سو سے زائد دیہات زیرآب آگئے ہیں جبکہ سیالکوٹ اور راجن پور میں متعدد شاہراہیں اور پل سیلاب میں بہہ گئے ہیں۔

گوجرانوالہ میں بھی دو درجن سے زائد دیہات بھی زیر آب آ گئے ہیں۔

’بارشوں میں 80 ہلاک، 333 دیہات متاثر‘

’بارشوں میں 58 ہلاک، 245 دیہات متاثر‘

خیبرپختون خوا میں شدید بارشوں سے تین افراد ہلاک

چترال: سیلابی ریلے سے مکانات، پُل تباہ

چنیوٹ میں دریائے چناب کے قریب ڈیڑھ سو سے زائد دیہات کو سیلاب کے خطرے سے خبردار کر دیا گیا ہے۔

دریائے ستلج میں اونچے درجے کے سیلاب کے باعث ضلع وہاڑی کی پانچ تحصیلوں کے لیے بھی سیلاب کے خطرے کی اطلاع دی گئی ہے۔

دوسری جانب ایک نہر کا پل گرنے کے باعث مریدکے اور نارروال کے درمیان ٹریفک معطل اور کم سے کم تیس دیہات زیرِ آب آ گئے ہیں۔

صوبہ سندھ میں دریائے سندھ میں دادو مورو پل کے مقام پر پانی کی سطح بڑھنے سے تقریباً تیس دیہات زیر آب آ گئے ہیں۔

ادھر پاکستان کے قدرتی آفات سے نمٹنے کے ادارے این ڈین ایم اے کے مطابق پاکستان کے صوبہ پنجاب میں 20، خیبر پختونخوا میں 24، سندھ میں 22، قبائلی علاقہ جات میں 12 اور پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر میں اب تک 4 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

این ڈین ایم اے کے اعدادوشمار کے مطابق پنجاب میں 67، خیبر پختونخوا میں 17، سندھ میں 10، بلوچستان میں 2 اور پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر میں اب تک 5 افراد زخمی ہوئے۔

این ڈین ایم اے کے اعدادوشمار کے مطابق ملک میں حالیہ سیلاب اور بارشوں سے اب تک 386 دیہات متاثر ہوئے ہیں جن میں پنجاب میں 328، خیبر پختونخوا میں 15، سندھ میں 15 اور بلوچستان میں 28 دیہات شامل ہیں۔

این ڈین ایم اے کی جانب سے جاری کیے جانے والے اعدادوشمار کے مطابق حالیہ سیلاب اور بارشوں سے پنجاب میں 2,224، خیبر پختونخوا میں 149 اور پاکستان کے زیرِ انتظام کشمیر میں میں ایک مکان مکمل طور پر تباہ ہو گیا۔

اسی بارے میں