سوات میں مزید 60 عسکریت پسند رہا کر دیے گئے

Image caption مشال میں سابق عسکریت پسندوں کو تعلیم کے ساتھ ہنر کی دولت سے بھی آراستہ کیا جاتا ہے

سوات کے علاقے گلی باغ میں قائم پاک فوج کے زیرِانتظام ادارے مشال سے شورش پسندی میں ملوث مزید 60 عسکریت پسندوں کو جمعے کے روز رہا کردیا گیا۔

منتظمین کے مطابق اب تک 1189 عسکریت پسند ذہنی تربیت اور ہنر سیکھ کر اپنے اپنے گھروں کو لوٹ گئے ہیں۔

گرفتار عسکریت پسندوں کو شدت پسندی کے راہ ترک کر کے مفید شہری بنانے کا عمل جاری ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ان کا مقصد یہ ہے کہ جدید اور مہذب دنیا کے بارے میں ان کا رویہ تبدیل کیا جائے اور انتہا پسندانہ رجحانات میں کمی کے ساتھ یہ بہتر روزگار بھی حاصل کریں۔

ادارے سے ذہنی بحالی کی تربیت مکمل کرنے والے ضلع دیر سے تعلق رکھنے والے عزیز اللہ نے بی بی سی کو بتایا کہ طالبان نے انھیں اسلام کی غلط تشریح بیان کی تھی جس کی بنیاد پر انھوں نے عسکریت پسندوں کا ساتھ دیا تھا مگر اب وہ اپنی سابقہ سرگرمیوں پر نادم ہیں۔

ان کے مطابق مشال میں اسلامی علوم کے ساتھ انہیں ہنر بھی سکھایا گیا ہے اور اب وہ اپنے گاؤں جاکر الکیٹریشن کی دوکان کھولیں گے اور رزقِ حلال کمائیں گے۔

سوات میں آئی ایس پی ار کے ترجمان کرنل ذیشان نے بتایا کہ تربیت مکمل کر کے گھروں کو لوٹنے والے افراد پر ایک خاص میکنزم کے تحت نظر رکھی جاتی ہے تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ کہیں یہ دوبارہ بھٹک نہ جائیں۔

Image caption اب اپنے گاؤں جاکر الیکٹریشن کی دوکان کھولوں گا اور رزقِ حلال کماؤں گا: عزیز اللہ

ان کے مطابق اب تک ایک آدھ کیس کے علاوہ کوئی ایسا کیس سامنے نہیں آیا جس میں یہ لوگ دوبارہ دہشت گردی میں ملوث پائے گئے ہوں کیونکہ ان افراد سے باقاعدہ ملک کی وفاداری اور دہشت گردی میں ملوث نہ ہونے کا حلف بھی لیا جاتا ہے۔

سوات کے ایک مقامی شخص لیاقت نے بتایا کہ چند برس پہلے سوات پر طالبان کا کنٹرول تھا جہاں انہوں نے اپنے عقائد کے مطابق شرعی قانون نافذ کر رکھا تھااور اس قانون سے اختلاف رکھنے والے زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھتے۔

ان کے مطابق بے روزگار افراد کی بڑی تعداد طالبان کے ساتھ مل گئی تھی جن میں زیادہ تر یا تو آپریشن یا آپریشن کے بعد گرفتار ہوئے۔

انہوں نے پاک فوج کے اس اقدام کو سراہتے ہوئے کہا پاک فوج معمولی نوعیت کے شدت پسندوں کو مذہبی علوم کے ساتھ ساتھ ہنر بھی سکھا رہی ہے جن سے افراد کو مستقبل میں شدت پسندی سے دور رکھنے میں مدد ملے گی۔

اسی بارے میں