سردار اختر مینگل کے گھر پر بم حملہ

Image caption سردار اختر مینگل بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے سربراہ ہیں

بلوچستان کے مرکزی شہر کوئٹہ میں بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے سربراہ سردار اخترمینگل کے گھر پردستی بموں سے حملہ کیا گیا، تاہم اس میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

پولیس کے مطابق کوئٹہ کے علاقے ریلویز ہاؤسنگ سوسائٹی میں واقع سردار اختر مینگل کے گھر مینگل ہاؤس پر ہفتے کی شب نامعلوم موٹر سائیکل سواروں نے دودستی بم پھینکے۔ دستی بموں کے پھٹنے سے گھر کو معمولی نقصان پہنچا لیکن کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

سردار اختر مینگل حملے کے وقت اپنے اس گھر میں موجود نہیں تھے بلکہ سریاب روڈ پر واقع دوسرے گھر خاران ہاؤس میں تھے۔ تاہم ان کے پارٹی کے دیگر افراد اور ذاتی محافظ گھر میں موجود تھے۔

یاد رہے کہ اختر مینگل پونے چار سالہ خود ساختہ جلاوطنی کے بعد اپریل کے مہینے میں دبئی سے پاکستان واپس لوٹے تھے۔ ان کی جماعت نے مئی کے انتخابات میں حصہ لیا تھا جس میں اختر مینگل نے صوبائی اور قومی اسمبلی کی نشستوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔

اس حملے کے بعدمیڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سردار اختر مینگل کہا کہ انہوں نے اسمبلی میں جو تقریر کی شاید وہ کسی کو پسند نہ آئی ہو جس کے باعث ان کے گھر پر حملہ کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ جن لوگوں نے یہ حملہ کیا ان کو یہ معلوم ہونا چاہیے کہ ہمارے لہجے میں شیرینی نہیں بلکہ مزید تلخی آئے گی۔

ایک سوال پر انھوں نے کہا کہ ان کی امریکہ یا طالبان سے کوئی دشمنی نہیں ہے جس پر وہ یہ کہہ سکیں کہ یہ حملہ انہوں نے کیا ہے۔

سردار اختر مینگل نے الزام عائد کیا کہ یہ حملہ مبینہ طور پر سرکار یا اس کے لوگوں نے کیا ہوگا۔

اسی بارے میں