بنوں: بم دھماکے میں بچیوں سمیت 13 افراد زخمی

Image caption دھماکہ اس وقت ہوا جب چھٹی کے بعد بچیاں سکول سے نکل رہی تھیں: پولیس

پاکستان کے صوبہ خیبر پختون خوا کے جنوبی ضلع بنوں میں حکام کا کہنا ہے کہ سکول کے قریب ہونے والے ایک بم حملے میں چھ بچیوں سمیت تیرہ افراد زخمی ہوگئے ہیں۔

پولیس کے مطابق یہ واقعہ جمعرات کو تقریباً ساڑھے بارہ بجے کے قریب بنوں شہر میں خواتین کے سب سے مصروف بازار گردا نالی میں پیش آیا۔

بنوں پولیس کے سربراہ محمد اقبال نے پشاور میں ہمارے نامہ نگار رفعت اللہ اورکزئی کو بتایا کہ تقریباً چار کلوگرام بارودی مواد بازار میں ایک ایسی جگہ پر نصب کیا گیا تھا جس کے قریب لڑکیوں کا پرائمری سکول بھی واقع ہے۔

انھوں نے کہا کہ دھماکے میں تیرہ افراد زخمی ہوئے جن میں سکول کی چھ بچیاں ، چار راہ گیر اور دوکاندار شامل ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ دھماکہ اس وقت ہوا جب چھٹی کے بعد بچیاں سکول سے نکل رہی تھیں۔

پولیس سربراہ کے مطابق بظاہر ایسا لگتا ہے کہ دھماکے کا ہدف سکول نہیں بلکہ خواتین کا بازار تھا۔ تاہم اس سلسلے میں تحقیقات کی جارہی ہے۔ زخمیوں کو قریبی ہپستال منتقل کیا گیا ہے ۔

پولیس افسر کے مطابق دھماکہ خیز مواد ٹین کے ڈبے میں نصب کیا گیا تھا۔

بنوں کے مقامی صحافی عمر دراز وزیر کے مطابق دھماکے میں سکول کی عمارت مکمل طورپر محفوظ رہی ہے جبکہ بازار میں دوکانوں کو بھی کوئی خاص نقصان نہیں پہنچا ہے۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ گردا نالی بازار شہر کے ایک تنگ سی گلی میں واقع ہے جہاں صبح سے لے کر شام تک خواتین کا ہجوم رہتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس بازار کے دوکانداروں کو پہلے بھی نامعلوم افراد کی طرف دھمکیاں ملی تھیں کہ وہ خواتین کو اپنے دوکانوں میں نہ چھوڑے اور یہاں سے کسی اور جگہ منتقل ہوجائے۔

ابھی تک کسی تنظیم کی طرف سے اس دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی گئی ہے۔

یاد رہے کہ بنوں میں اس سے پہلے بھی متعدد مرتبہ سکولوں کو بم دھماکوں میں نشانہ بنایا جاچکا ہے جس میں کئی سرکاری اور غیر سرکاری تعلیمی ادارے تباہ ہوچکے ہیں۔ تاہم وہاں یہ اپنی نوعیت کا پہلا ایسا دھماکہ ہے جس میں بچیاں زخمی ہوئی ہیں۔

ادھر بنوں ہی میں مقامی افراد اور شدت پسندوں کے درمیان فائرنگ کے نتجے میں ایک عسکریت پسند ہلاک جبکہ ایک کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

پولیس کے مطابق عسکریت پسندوں کا ایک گروپ بنوں شہر سے دو کلومیٹر دور گاؤں میں ایک مکان کے سامنے بم نصب کر رہےتھے کہ اس دوران ان پر مقامی لوگوں کی طرف سے فائرنگ کی گئی جس سے ایک شدت پسند ہلاک ہو گیا جبکہ بعد میں پولیس نے ایک عسکریت پسند کو گرفتار کرلیا۔

اسی بارے میں