ایم کیو ایم کے رہنما کی گرفتاری پر کراچی میں ہنگامہ آرائی

Image caption منگل کے روز پاپوش نگر پولیس سٹیشن کی حدود میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے دو پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے تھے

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں متحدہ قومی موومنٹ کے سابق رکن سندھ اسمبلی ندیم ہاشمی کی گرفتاری کے بعد شہر میں ہنگامہ آرائی جاری ہے۔

اطلاعات کے مطابق کراچی میں مختلف علاقوں میں اکثر کاروبار بند ہیں اور پبلک ٹرانسپورٹ معطل ہے۔

خدا جانے کیا مشورہ تھا؟

کراچی میں رینجرز کی کارروائی، 34 ملزمان گرفتار

’رینجرز صرف جھاڑو پھیر سکتے ہیں‘

کراچی میں ٹارگٹڈ آپریشن کرنے کا فیصلہ

نامہ نگار ریاض سہیل نے بتایا کہ بدھ کی صبح ان واقعات میں نامعلوم افراد نے تین سے زیادہ منی بسوں کو نذر آتش کر دیا اور فائرنگ کے واقعات بھی پیش آئے۔ نامہ نگار کا کہنا ہے کہ شہر میں ہنگامہ آرائی کے دوران رینجرز کی جانب سے دوپہر تک کوئی کارروائی سامنے نہیں آسکی تھی۔

یاد رہے کہ ندیم ہاشمی کو پولیس نے گذشتہ رات کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد سے حراست میں لیا تھا۔

متحدہ قومی موومنٹ کے سندھ اسمبلی میں ڈپٹی پارلیمانی لیڈر خواجہ اظہارالحسن کے مطابق ندیم ہاشمی کے خلاف قتل اور انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے ۔ ان پر پولیس موبائل پر فائرنگ کرنے کا الزام بھی ہے۔

متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین نے ندیم ہاشمی کی گرفتاری کی مذمت کی ہے اور انھوں نے وزیر اعظم اور وزارت داخلہ سے اس معاملے کی تحقیقات کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

خواجہ اظہار الحسن نے میڈیا کے نمائندوں کے بات چیت میں کہا کہ ’جن دو پولیس والوں کی ابھی شہادت ہوئی ہے، ابھی اس کے گواہ نہیں ملے، اور نہ ہی تحقیقات نہیں ہوئی ہیں۔ ہم نے کراچی میں قیامِ امن کے لیے مطالبہ کیا تھا، تو ہمیں اس مطالبے کی پاداش میں سزا دی جا رہی ہے۔‘

یاد رہے کہ منگل کے روز پاپوش نگر پولیس سٹیشن کی حدود میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے دو پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے تھے۔

پولیس اور ہسپتال ذرائع کے مطابق کانسٹیبل محمد علی اور عارف کو حیدری کے علاقے میں پولیس وین پر فائرنگ کر کے ہلاک کیا گیا۔ ان کی لاشیں عباسی شہید ہسپتال بھجوا دی گئی ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے کراچی میں امن و امان کے بارے میں وفاقی کابینہ کے اجلاس میں رینجرز کو کلیدی کردار دیا گیا تھا۔

دوسری جانب وفاقی وزیر اطلاعات پرویز رشید نے واضح کیا ہے کہ وزیر اعظم میاں نواز شریف کا آج کراچی کے دورے کا کوئی پروگرام نہیں تھا۔

ان کے مطابق کراچی میں جو بھی اقدامات کیے جا رہے ہیں اس میں تمام جماعتوں کی مشاورت شامل ہے۔

اسی بارے میں